Thursday , March 30 2017
Home / ہندوستان / دہلی میں کوئی نیا ٹیکس نہیں، تعلیم صحت اور نقل و حمل پر خاص توجہ

دہلی میں کوئی نیا ٹیکس نہیں، تعلیم صحت اور نقل و حمل پر خاص توجہ

سینئر شہریوں کیلئے کمیشن کی تشکیل کا اعلان ، سستی تعلیم اور رہائش گاہوں کا وعدہ: سیسوڈیا

نئی دہلی، 8 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) دہلی حکومت نے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں کسی قسم کا نیا ٹیکس نہ لگاتے ہوئے تعلیم، صحت، نقل و حمل اور رہائشی علاقے پر خصوصی زور دیا ہے ۔وزیر خزانہ منیش سیسوڈیا نے آج دہلی اسمبلی میں مالی سال 18۔2017 ء کا بجٹ پیش کرتے ہوئے کہا کہ عام آدمی پارٹی (عآپ) کی حکومت نے مسلسل تیسرے سال ٹیکس سے مبرا بجٹ پیش کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے صحت، تعلیم، عوامی نقل و حمل اور جھگی جھونپڑی والوں کیلئے سستی رہائش فراہم کرنے پر خصوصی زور دیا ہے ۔سینئر شہریوں کیلئے ایک کمیشن بنانے کا اعلان بھی کیا گیا ہے ۔بجٹ میں کم قیمت والے سینیٹری نیپکن اور ہوائی جہاز کے ایندھن پر ٹیکس کم کئے جانے کی تجویز پیش کی گئی ہے ۔ آئندہ مالی سال میں حکومت نے 38 ہزار 700 کروڑ روپے ٹیکس ریونیو وصولی کا ہدف رکھا ہے ۔ تعلیم کے میدان میں 34 نئے اسکول کھولنے کے ساتھ ہی 10000 نئے کمرے اور 400 نئی لائبریری کھولنے کا بھی اعلان کیا گیا ہے ۔ تمام اسکولوں میں ڈانس ٹیچروں کی تقرری اور طالب علموں کی معلومات رکھنے کیلئے اساتذہ کو ٹیبلٹ دستیاب کرائے جائیں گے ۔آئندہ مالی سال میں 10 ہزار نئے آٹو پرمٹ، کلسٹر منصوبہ بندی کے تحت 736 نئی بسیں شامل کرنے اور تمام بسوں میں ٹکٹ الیکٹرانک مشین فراہم کرنے کا اعلان کیا گیا ہے ۔آئی ٹی او پر پیدل مسافروں کی بھیڑ بھاڑ کے پیش نظر ہوئے اسکائی واک اور پھُٹ وئر برج بنایا جائے گا۔دہلی کو کھلی جگہ میں رفع حاجت سے پاک شہر بنانے کی سمت میں آئندہ مالی سال کے دوران 6000 نئے بیت الخلاء بنائے جائیں گے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT