Tuesday , August 22 2017
Home / ہندوستان / دہلی وقف بورڈ 6ماہ کے لئے معطل صدر نشین کے انتخاب کا تنازعہ ہائی کورٹ سے رجوع

دہلی وقف بورڈ 6ماہ کے لئے معطل صدر نشین کے انتخاب کا تنازعہ ہائی کورٹ سے رجوع

نئی دہلی۔/22اکٹوبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) عام آدمی پارٹی حکومت نے دہلی وقف بورڈ کو معطل کردیا ہے اوراس کے تمام اختیارات اور فرائض  شہری انتظامیہ میں معتمد مالگذاری ( ریونیو سکریٹری ) کو منتقل کردیا۔ ریونیو سکریٹری مسٹر اے امبراسو نے 10اکٹوبر 2015 کو جاری کردہ ایک اعلامیہ میں بتایا کہ وقف ایکٹ1999ء کے سیکشن 99(1) کے تحت محصلہ اختیارات کو بروئے کار لاتے ہوئے دہلی وقف بورڈ کو چھ ماہ کیلئے معطل کردیا ہے تاہم صدر نشین بورڈ محترمہ رعنا پروین صدیقی نے بتایا کہ مذکورہ اعلامیہ کی منسوخی کیلئے دہلی ہائی کورٹ میں ایک عرضی داخل کردی گئی ہے جس پر 30اکٹوبر کو سماعت کی جائے گی جبکہ نوٹیفکیش میں یہ بھی وضاحت کردی گئی۔ بورڈ کے تمام اختیارات اور فرائض سکریٹری ریونیو کو منتقل کردیئے گئے ہیں۔ واضح رہے کہ رعنا پروین صدیقی کا بحیثیت صدرنشین وقف بورڈ انتخاب 20جنوری کو بورڈ ارکان کے اجلاس میں کیا گیا تھا اگرچیکہ بورڈ کے 7ارکان ہیں لیکن 4ارکان نے ہی انہیں منتخب کیا تھا۔ چونکہ یہ مسئلہ دہلی ہائی کورٹ سے رجوع کردی گیا تھا جس کے باعث حکومت نے باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری نہیں کیا اور عدالت نے جوں کا توں موقف برقرار رکھنے کی ہدایت دی تھی۔

TOPPOPULARRECENT