Sunday , August 20 2017
Home / ہندوستان / دہلی کی عدالت میں ڈاکٹر کی درخواست ضمانت مسترد

دہلی کی عدالت میں ڈاکٹر کی درخواست ضمانت مسترد

نئی دہلی۔/23 فبروری، ( سیاست ڈاٹ کام ) ایک سرکاری ہاسپٹل میں برسر خدمت ڈاکٹر نے شادی کی تجویز نامنظور کردینے پر ساتھی خاتون پر تیزابی حملہ کروادیا تھا۔ دہلی کی عدالت نے آج اس کی درخواست ضمانت مسترد کردی ہے۔ ایڈیشنل سیشن جج نریش کمار ملہوترہ نے ڈاکٹر اشوک کمار یادو کی درخواست ضمانت نامنظور کرتے ہوئے کہا کہ اصل ملزم اور دیگر دو نابالغ لڑکوں کو راحت فراہم کرنے کیلئے کوئی بنیادی وجوہات نہیں بتائی گئیں جبکہ ان لڑکوں کو بس میں پکڑ لیا گیا اور جیونیل جسٹس بورڈ نے انہیں جرم کا مرتکب قرار دیا۔ عدالت نے یہ نشاندہی کی کہ یادو کی درخواست ضمانت 13ڈسمبر 2015 کو دہلی ہائی کورٹ میں مسترد کردی گئی تھی اور کہا کہ درخواست گذار کے خلاف سنگین نوعیت کے الزامات ہیں اور متاثرہ خاتون کے موبائیل فون سے حاصل کردہ آواز کے نمونوں کی فارنسک لیباریٹری میں جانچ پر ملزم کی آواز کی تصدیق کی گئی اور عدالت کے روبرو کوئی وجہ نظر نہیں آئی کہ ملزم کی درخواست ضمانت منظور کرلی جائے۔ پولیس کے بموجب ایک 30سالہ سینئر ریڈیزنٹ ڈاکٹر پر حملہ میں یادو اصل سازشی ہیں جبکہ 23ڈسمبر 2014 کو ایک مارکٹ میں خریداری کررہی تھی کہ تیزاب سے حملہ کردیا گیا جس میں اس کا چہرہ جھلس گیا تھا چونکہ اس خاتون نے یادو کی شادی کی پیشکش کو قبول نہیں کیا تھا جس کا انتقام لیا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT