Saturday , August 19 2017
Home / ہندوستان / دیاشنکر ہنوز پولیس کی گرفت سے باہر

دیاشنکر ہنوز پولیس کی گرفت سے باہر

بی ایس پی کارکنوں کی بد زبانی پر اہلیہ کا اعتراض
لکھنو ۔ 22 ۔ جولائی : ( سیاست ڈاٹ کام ) : بی جے پی سے معطل لیڈر دیا شنکر سنگھ کی تلاش کے لیے پولیس نے کل شب بھر دھاوے جاری رکھے جب کہ روپوش لیڈر کے افراد خاندان نے یہ دھمکی دی ہے کہ مایاوتی اور سینئیر بی ایس پی قائدین کے خلاف فحش زبان استعمال کرنے پر ایف آئی آر درج کروائی جائے گی ۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ منوج کمار جھا نے بتایا کہ کل رات بھر دھاوے کئے گئے لیکن مفرور لیڈر کے بارے میں کوئی سراغ نہیں ملا۔ تاہم غیر مصدقہ اطلاعات میں کہا گیا ہے کہ دیاشنکر سنگھ بہت جلد لکھنو کی عدالت میں خود سپردگی اختیار کریں گے ۔ انہوں نے بتایا کہ پوچھ تاچھ کے لیے سنگھ کے بھائی دھرمیندرا کو حراست میں لے لیا گیا ہے لیکن وہ کوئی اطلاع فراہم کرنے سے قاصر رہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ دیاشنکر 21 جولائی کو گورکھپور روانہ ہوگئے اس کے بعد کوئی رابطہ قائم نہیں ہوسکا کیوں کہ ان کا موبائل بھی بند کردیا گیا ہے ۔ دریں اثناء دیاشنکر سنگھ کی اہلیہ سواتی نے کہا کہ خواتین کی عظمت کی دہائی دینے والے کس طرح کی زبان استعمال کررہے ہیں جب کہ بی ایس پی لیڈروں کی بدزبانی سے میری کمسن لڑکی سکتہ میں آگئی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ میرے شوہر سیاست میں ہیں لیکن سیاست سے ہمارا کوئی تعلق نہیں ہے ۔ اس کے باوجود ہمارے خاندان کو تنازعہ میں گھسیٹا جارہا ہے ۔ انہوں نے مایاوتی سے استفسار کیا کہ پارٹی لیڈر نسیم الدین کے خلاف کارروائی کیوں نہیں کی ۔ جنہوں نے میری ساس ( دیاشنکر کی ماں ) کے خلاف مخرب اخلاق زبان استعمال کی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT