Thursday , September 21 2017
Home / Top Stories / دیناکرن برطرف لیڈر، پارٹی میٹنگ میں قرارداد منظور

دیناکرن برطرف لیڈر، پارٹی میٹنگ میں قرارداد منظور

عنقریب جنرل کونسل میٹنگ کے انعقاد کی بھی قرارداد، دیناکرن کیمپ نے پلانی سوامی گروپ کا دعویٰ مسترد کردیا
چینائی 28 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) آل انڈیا انا ڈی ایم کے پارٹی کے باغی لیڈر دیناکرن پر سخت تنقید کرتے ہوئے چیف منسٹر ٹاملناڈو پلانی سوامی کی زیرصدارت اجلاس نے آج کہاکہ اُنھیں ڈپٹی جنرل سکریٹری کے عہدہ سے 10 اگسٹ کو ہی برطرف کیا جاچکا ہے اور پارٹی عہدوں میں اُن کی جانب سے کی گئی تبدیلیاں بے اثر ہیں۔ آج کی میٹنگ میں منظورہ قرارداد میں کہا گیا کہ دیناکرن کو کوئی اتھاریٹی یا اہلیت حاصل نہیں کہ آنجہانی انا ڈی ایم کے سربراہ جیہ للیتا کے مقررہ کے افراد کو پارٹی عہدوں سے برخاست کرے اور اِس ضمن میں اُن کے اعلانات پارٹی اُمور میں لازم نہیں ہوتے ہیں۔ آج کی میٹنگ میں وزراء، ایم ایل ایز اور سینئر پارٹی عہدیداروں نے شرکت کی، جہاں یہ قرارداد بھی منظور کی گئی کہ جلد ہی جنرل کونسل میٹنگ طلب کی جائے گی جو جیل میں بند پارٹی سربراہ ششی کلا کے اخراج کی راہ ہموار کرسکتی ہے۔ ششی کلا کے بھانجے دیناکرن کا دعویٰ ہے کہ 21 ایم ایل ایز کی حمایت اُنھیں حاصل ہے اور وہ پلانی سوامی کو چیف منسٹر کی حیثیت سے برخاست کرنے کا مطالبہ اُس وقت سے کررہے ہیں جب پلانی سوامی اور باغی لیڈر پنیر سیلوم زیرقیادت دو گروپوں کا 21 اگسٹ کو انضمام ہوا۔ وہ اپنی پوزیشن ثابت کرنے کی کوشش میں پارٹی کے عہدیداروں میں تبدیلیاں بھی کرتے رہے ہیں بالخصوص ڈسٹرکٹ سکریٹریز میں بدلاؤ لایا ہے جو پارٹی میں کلیدی عہدہ ہوتا ہے، جس سے حامیوں کی تعداد بڑھائی جاسکتی ہے۔ اتفاق سے دیناکرن نے گزشتہ روز پلائی سوامی کی پارٹی کے سیلم ڈسٹرکٹ سکریٹری کی حیثیت سے برخاستگی کا اعلان کیا تھا۔ دیناکرن کیمپ نے آج کی قراردادوں کو کچھ بھی اہمیت نہ دیتے ہوئے یہ کہتے ہوئے مسترد کردیا کہ صرف پارٹی جنرل سکریٹری کو جنرل کونسل میٹنگ طلب کرنے کا اختیار ہے، جو پارٹی کا فیصلہ ساز ادارہ ہے۔ دیناکرن کیمپ نے یہ دعویٰ بھی کیاکہ اُنھیں آج کی میٹنگ کے لئے مدعو نہیں کیا گیا جو انا ڈی ایم کے ہیڈکوارٹرس میں منعقد ہوئی اور جہاں دیگر کے بشمول ڈپٹی چیف منسٹر اور پارٹی کوآرڈی نیٹر پنیر سیلوم شریک ہوئے۔

TOPPOPULARRECENT