Wednesday , August 23 2017
Home / اضلاع کی خبریں / دیہی ترقی کیلئے خصوصی فلاحی اسکیمات روبعمل

دیہی ترقی کیلئے خصوصی فلاحی اسکیمات روبعمل

نظام آباد:18؍ فروری (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز )دیہی ترقی اسکیم کے تحت بچکندہ، گندھاری،جکل، تاڑوائی منڈلوں میں روزگار، زراعت ، صحت، تعلیمات اور خواتین کی فلاح وبہبود کے شعبہ میں فروغ حاصل کرنے کیلئے خصوصی پروگرام عمل میں لائے جارہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار ضلع کلکٹر ڈاکٹر یوگیتا رانا ڈچپلی منڈل کے ٹی ٹی سی مرکز میں دیہی ترقیات، آئی کے پی ملازمین کے ساتھ منعقدہ اجلاس سے مخاطب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ غریب کسان کو زرعی اغراض کی تکمیل کیلئے فائدپہنچانے کیلئے جدوجہد کرنے، حکومت کی جانب سے متعارف کردہ آئی اے آر ٹی اسکیمات سے استفادہ ہونے کیلئے ان میں شعور بیدار کریں۔ آئی کے پی 117 ملازمین 5 منڈلوں میں مصروف ہونے اور مثالی اقدامات کرنے کی ضرورت پر زوردیا۔ آئی کے پی ملازمین کام کاج میں سدھار پیدا کرنے، منڈل سمکھیا دفتر میں بائیو میٹرک حاضر ی کے نظام کو نافذ کرنے، دیہی ترقیات کے تحت پچھڑے ہوئے طبقات سے تعلق رکھنے والے نوجوانوں کو روزگار سے متعلق تربیت فراہم کرنے، کیاپ فائونڈیشن کے ذریعہ نرسنگ اسسٹنٹ، ہوٹل مینجمنٹ کورسس کی تربیت، دسویں جماعت میں کامیاب ایس سی لڑکیوں کو تین ماہ کی مفت ٹریننگ دی جارہی ہے اور تربیت کیلئے 150 ایس سی لڑکیوں کو منتخب کریں اور انہیں 22 ؍ فروری سے حیدرآباد میں تربیت کیلئے روانہ کریں۔ نرسنگ کورس میں تربیت حاصل کرنے والے افراد کو ضلع کے خانگی دواخانہ میں ملازمت حاصل ہوگی۔ان تربیت میں تین ماہ میں 300 افراد کو روزگار کے مواقع فراہم ہوں گے۔ ملازمت کے خواہشمند خاندانوں کو ہی تربیت کیلئے روانہ کریں۔ تربیت میں مہارت کے حصول کیلئے والدین کی ہمت افزائی ناگزیر قرار دیتے ہوئے ہر دیہات میں کم از کم ایک ہزار بائیو گیس پلانٹ قائم کرنے، پولٹری فارم کے شیڈس اور بیت الخلائوں کی تعمیر کیلئے استفادہ کنندگان کا انتخاب کریںان 5 منڈلوں میں 114 گرام پنچایتوں میں ہر گھر میں بیت الخلاء، میجک پیٹس اور ہر دیہات میں 13 ہارویسٹنگ، ہندو قبرستان، ڈمپنگ یارڈ، مویشیوں کے پینے کے پانی کیلئے ہائوز، طمانیت روزگار اسکیم کے تحت منظور کرنے، جل کرانتی ابھیان کے تحت جکران پلی،اپلوائی، دیہاتوں کا انتخاب کیا گیا ہے۔ تمام کے تعاون سے جل گرام کے زیر زمین پانی کی سطح کے تحفظ اور اضافہ کیلئے اقدامات کرنے اور اسی دیہات میں 14لاکھ 20 ہزار روپئے خرچ کئے جائیں گے۔ ضلع کلکٹر نے بتایا کہ 2016-17 سال میں ضلع میں ایگریکلچر کے فروغ کیلئے 200 ایکر میں ملواری پودوں کی شجرکاری، مہیلا سنگموں کے ذریعہ نرسریوں کے قیام اور استفادہ کنندگان سے خواہش کی کہ نرسریوں میں 14لاکھ ملواری کے پودوں کی افزائش کرنے کی ہدایت دی۔ 2015-16 میں 100ایکر اور ملواری کی کاشت کے نشانہ میں سے 24 ایکر پر کاشت کی گئی ایگریکلچرسے واقفیت رکھنے والے 8 منڈلوں میں اس کی عمل آوری کیلئے فیصلہ کیا گیا۔ اس سال سرکنڈہ منڈل کے میلارام، بھیمگل منڈل کے پیپری، سداشیو نگر منڈل کے عیسائی پیٹ، ماچہ ریڈی منڈل کے خانہ پور، لنگم پیٹ منڈل کے متیم پیٹ، دومکنڈہ منڈل کے گورارم، پٹلم منڈل کے مناراور مدنور منڈل کے اورگائوںکے مواضعات میں استفادہ کنندگان کا انتخاب کرنے، سرکنڈہ منڈل کے پاکالا میں ملواری کی کاشت اور تیاری کیلئے پی جی ایف ٹیکنیکل اسسٹنٹ کا انتخاب کریں اور 29 ؍فروری تک استفادہ کنندگان کا انتخاب کرنے کی خواہش کی۔ اس اجلاس میں ڈی آر ڈی اے پی ڈی وینکٹیشم، اسٹیپ سی ای او مہیندر ریڈی، اے ڈی سی ڈی کلچر ناگناتھ رائوو دیگر بھی موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT