Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / د6 دسمبر کو تلنگانہ و آندھرا بند

د6 دسمبر کو تلنگانہ و آندھرا بند

بازیابی بابری مسجد کے لیے احتجاج ، صدر ایم بی ٹی ڈاکٹر قائم خاں و دیگر کی پریس کانفرنس
حیدرآباد۔3ڈسمبر(سیاست نیوز) بابری مسجد کی بازیابی کو یقینی بنانے کے مقصد سے ہی مجلس بچائو تحریک کا قیام عمل میںلایاگیا اور پچھلے 23سالوں سے تحریک مجلس بچائو تحریک بابری مسجد کی بازیابی کے لئے اپنا احتجاج درج کروارہی ہے۔ صدر تحریک ڈاکٹر قائم خان نے میڈیا سے خطاب کے دوران یہ بات کہی۔سابق کارپوریٹر امجد اللہ خان ‘ الطاف نصیب خان‘ مصطفیٰ محمود‘ محمد چاند ‘ محمد پاشاہ اور دیگر بھی اس موقع پر موجود تھے۔ پریس کانفرنس کے دوران ڈاکٹر قائم خان نے 6ڈسمبر کو یوم سیاہ منانے اور اپنے گھروں پر سیاہ پرچم لہرانے کی مسلمانوں کے ساتھ سیکولر ذہن کے حامل لوگوں سے اپیل کی۔ انہوں نے پرامن احتجاج کو ہر ہندوستانی شہری کا حق قراردیا او رعوام سے 6ڈسمبر کو بابری مسجد کی شہادت کے خلاف رضاکارانہ طور پر تلنگانہ او رآندھرا میںبند منانے کی بھی عوام سے اپیل کی۔ انہوں نے کہاکہ ظلم او رزیادتی اسلامی تعلیمات کے عین خلاف ہے انہوں نے جبراً بند کرنے سے گریز کی بھی نوجوانوں سے اپیل کرتے ہوئے جمہوری ہندوستان کی عدلیہ سے بابری مسجد کے ساتھ انصاف کی امید ظاہر کی۔ ڈاکٹر قائم خان نے 6ڈسمبر کو حسب روایت مجلس بچائو تحریک کی جانب سے گورنر ای ایس ایل نرسمہن کو تحریری یادواشت پیش کرنے کا بھی اس موقع پر اعلان کیا۔ امجد اللہ خان نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے بابری مسجد کی متعلق آستھا کی بنیاد پر اتر پردیش عدالت کے فیصلہ کو جمہوری ہندوستان کے لئے خطرناک قرادیا۔ انہوں نے کہاکہ اگر عدالتیں آستھا کی بنیاد پر فیصلہ کرنے لگیں تو ہندوستان کے اقلیتی طبقات کے ساتھ آئے دن ناانصافی کے واقعات پیش آئیں گے ۔ امجد اللہ خان نے کہاکہ عدم روادری کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کے لئے سب سے پہلے بابری مسجد کی دوبارہ اسی مقام پر تعمیرکی جانی چاہئے۔ انہوں نے کہاکہ بی جے پی کے مرکز میں اقتدار میں آنے کے بعد مہارشٹرا میں بی جے پی کی بھاری اکثریت سے کامیابی نے فرقہ پرست طاقتوں کے حوصلوں کو مضبوط کردیا ہے ۔ امجد اللہ خان نے تاریخی عثمانیہ یونیورسٹی میںبیف فیسٹول کے انعقاد کی مخالفت کرنے والے راجہ سنگھ کی بیان بازیوںپر کنٹرول کرنے کا بھی حکومت تلنگانہ سے مطالبہ کیا۔انہو ں نے کہاکہ راجہ سنگھ کی بیان بازیوں سے شہر حیدرآباد او ریاست تلنگانہ کی پرامن فضاء خراب ہوسکتی ہے ۔ انہوں نے حکومت تلنگانہ سے بیف فیسٹول کا انعقاد عمل میںلانے والے طلبہ کو سکیورٹی فراہم کرتے ہوئے پرامن انداز میںبیف فیسٹول منعقد کرنے کا مواقع فراہم کرنے کا بھی حکومت تلنگانہ سے مطالبہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT