Wednesday , July 26 2017
Home / ہندوستان / ذات پات کے فرضی سندوں پر نوکریاں ‘ داخلے غیر درست

ذات پات کے فرضی سندوں پر نوکریاں ‘ داخلے غیر درست

نئی دہلی ۔ 6جولائی (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے آج کہا کہ نوکریاں اور داخلے جو محفوظ زمرہ کے تحت جعلی کاسٹ سرٹیفیکٹس کو استعمال کرتے ہوئے حاصل کئے جائے وہ قانون کی نظر میں درست یا برقراری کے قابل نہیں ہوسکتے ہیں ۔ چیف جسٹس جے ایس کھیہر اور جسٹس ڈی وائی چندرچوڑ کی بنچ نے بامبئے ہائیکورٹ کی رائے سے اتفاق نہیں کیا کہ اگر کوئی شخص طویل مدت تک سرویس میں برقرار رہتاہے اور اس کا سرٹیفیکٹ کسی مرحلہ پر فرضی پایا جاتا ہے تو اسے سرویس جاری رکھنے کی اجازت دی جاسکتی ہے ۔ یہ حکم نامہ ہائیکورٹ فیصلہ کے خلاف مختلف عرضیوں پر دیا گیا جن میں حکومت مہاراشٹرا کی عرضی شامل ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT