Saturday , March 25 2017
Home / Top Stories / ذاکر نائک اور آئی آر ایف غیرقانونی سرگرمیوں میں ملوث ، مرکز کا امتناع برقرار :ہائیکورٹ

ذاکر نائک اور آئی آر ایف غیرقانونی سرگرمیوں میں ملوث ، مرکز کا امتناع برقرار :ہائیکورٹ

نئی دہلی ۔ /16 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) دہلی ہائیکورٹ نے ڈاکٹر ذاکر نائک کے اسلامک ریسرچ فاؤنڈیشن (آئی آر ایف) پر فی الفور امتناع عائد کرنے مرکز کے فیصلے کو برقرار رکھا اور کہا کہ یہ تنظیم ، اس کے صدر اور ارکان ’’غیرقانونی سرگرمیوں‘‘ میں ملوث رہے ۔ جسٹس سنجیو سچدیو نے آئی آر ایف کے اس دعوے کو مسترد کردیا کہ مرکز نے اپنے فیصلے میں امتناع کی کوئی وجوہات نہیں بتائی ۔ انہوں نے کہا کہ ایسے کئی شواہد موجود ہیں جن کی بنیاد پر یہ کہا جاسکتا ہے کہ مرکز نے ملک کی سالمیت ، یکجہتی کے مفاد اور عام حالات کو بحال رکھنے کے مقصد سے فوری یہ کارروائی کی ہے ۔ درخواست گذار تنظیم ، صدر اور ارکان کی سرگرمیاں جن میں وہ ملوث رہے واضح طور پر غیرقانونی سرگرمیوں کے دائرے میں آتی ہیں ۔ مرکز کے حکمنامہ کے بعض حصوں کی صراحت کرتے ہوئے عدالت نے بتایا کہ فاؤنڈیشن کے بانی ذاکر نائک اور اس کے ارکان اپنے حامیوں میں نفرت اور دو مذہبی فرقوں و گروپس کے مابین مخاصمت کو بڑھاوا دے رہے تھے ۔ آئی آر ایف نے /17 نومبر 2016 ء کو درخواست دائر کرتے ہوئے مرکز کے فیصلے کو چیالنج کیا تھا ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT