Thursday , March 30 2017
Home / انتقال نام / رائلسیما کے ہردلعزیز قائد بھوما ناگی ریڈی کا انتقال

رائلسیما کے ہردلعزیز قائد بھوما ناگی ریڈی کا انتقال

چندرا بابو نائیڈو اور دیگر قائدین کا اظہار تعزیت
حیدرآباد۔/12مارچ، ( سیاست نیوز) ریاست آندھرا پردیش کے علاقہ رائلسیما کے نامور و ہردلعزیز سیاستدان و رکن اسمبلی حلقہ نندیال ( ضلع کرنول ) مسٹر بھوما ناگی ریڈی کی بعمر 53سال قلب پر شدید حملہ کے باعث موت واقع ہوگئی۔بتایا جاتا ہے کہ صبح جب وہ اپنی رہائش گاہ الاگڈہ میں اخبار کا مطالعہ کررہے تھے تب ان کے قلب پر شدید حملہ ہوا جس کی وجہ سے بھوما ناگی ریڈی وہیں پر بے ہوش ہوگئے۔ ان کے قریب رہنے والی دوسری دختر ناگا مونی نے اپنے والد کی صورتحال کو دیکھتے ہوئے فوری طور پر ایک خانگی ہاسپٹل منتقل کیا۔ اس وقت تک بھی بھوما ناگی ریڈی کی حالت انتہائی تشویشناک ہوگئی تھی۔ باوثوق قریبی ذرائع نے یہ بات بتائی اور کہا کہ اس تشویشناک صورتحال کی اطلاع پر مقامی ڈاکٹروں کی ایک ٹیم فوری خانگی دواخانہ پہنچ کر ان کی زندگی کو بچانے کی ہر ممکنہ کوشش کی اور انہیںفوری طور پر ای ٹی ٹیوب کے ساتھ امیو بیاگ لگاکر سانس کی فراہمی کے آلات کے ساتھ الا گڈہ سے نندیال کے سرکشا ہاسپٹل منتقل کیا گیا جہاں پر ان کی زندگی کو بچانے کیلئے تمام تر ممکنہ کوشش کی گئی لیکن یہ تمام کوششیں بے قائدہ اور بے سود ثابت ہوئیں اور ان کی موت واقع ہوگئی۔ اسوقت مسٹر بھوما ناگی ریڈی کے ساتھ ان کی بڑی دختر رکن اسمبلی حلقہ الاگڈہ اکھیلا پریا اور دوسروں دختر ناگامونی بھی موجود تھیں۔ بتایا جاتا ہے کہ مسٹر بھوما ناگی ریڈی کو گذشتہ عرصہ کے دوران قلب پر حملہ ہونے کی وجہ سے بائی پاس سرجری کی گئی تھی اور ایک ہفتہ قبل ہی پھر ایک مرتبہ قلب پر شدید حملہ ہونے کے باعث حیدرآباد کے ایک نامور خانگی دواخانہ میں شریک کروایا گیا تھا۔ جہاں ان کا موثر انداز میں علاج ہونے کے بعد صحت یاب ہوکر دواخانہ سے ڈسچارج ہوئے اور وہ دوبارہ وجئے واڑہ روانہ ہوئے تھے۔ جہاں آندھرا پردیش قانون ساز اسمبلی کا بجٹ سیشن جاری ہے۔ وجئے واڑہ میں اپنے قیام کے دوران چیف منسٹر مسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے ناگی ریڈی کو اپنی صحت پر خصوصی توجہ دینے کا مشورہ دیا تھا اور انہیں دلاسہ دیا تھا کہ وہ کسی تشویش میں مبتلاء نہ ہوں بلکہ ادویات کے استعمال کے ذریعہ صحت پرخصوصی توجہ دینے کی تلقین کی تھی۔ ذرائع نے بتایا کہ گذشتہ شب ہی وہ ( بھوما ناگی ریڈی ) وجئے واڑہ سے اپنی قیامگاہ واقع الا گڈہ پہونچے تھے اور رات میں شب بسری کے بعد علی الصبح روز مرہ کی طرح اخبارات کا مطالعہ کررہے تھے کہ اچانک دوبارہ آج صبح قلب پر شدید حملہ ہوا اور یہ حملہ ان کیلئے جان لیوا ثابت ہوا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT