Tuesday , August 22 2017
Home / ہندوستان / راجستھان حکومت غیرقانونی مسالخ پر امتناع کی پابند عہد

راجستھان حکومت غیرقانونی مسالخ پر امتناع کی پابند عہد

صدر پجاریوں کے مطالبے کے پیش نظر ریاستی وزیر کرپلانی کا بیان ۔ جئے پور میئر بھی سرگرم

جئے پور ، 5 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) حکومت راجستھان ریاست میں غیرقانونی مسالخ پر امتناع عائد کردینے کی پابند عہد ہے، وزیر شہری ترقی سریچند کرپلانی نے آج یہ بات کہی۔ یہ بیان اس پس منظر میں سامنے آیا ہے کہ یہاں پجاریوں کے ایک گروپ نے ریاست میں تمام مسالخ پر مکمل امتناع کا مطالبہ کیا ہے۔ کرپلانی نے نیوز ایجنسی ’پی ٹی آئی‘ کو بتایا کہ چاہے غیرقانونی تعمیرات ہوں یا غیرقانونی مسالخ، اس طرح کی تمام سرگرمیاں کارروائی کی متقاضی ہیں۔ ریاستی حکومت ان کے خلاف کارروائی کرنے کی پابند عہد ہے۔ حال میں راجستھان کی بڑی مندروں کے 17 صدر پجاریوں نے یہاں بڑی چوپار کی لکشمی نارائن مندر میں ’’دھرم سنسد‘‘ منعقد کرتے ہوئے مسالخ پر مکمل امتناع کا مطالبہ کیا ہے۔ شری گلتا پیٹھ کے سوامی سمپت کمار نے بتایا جاتا ہے کہ تمام مسالخ پر پابندی کا مطالبہ کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ قانونی مذبح تک غیرقانونی سرگرمیوں میں ملوث ہیں۔ مقامی انتظامی ادارے کے عہدیداروں نے کہا کہ غیرقانونی مسالخ کے خلاف کارروائی معمول کا کام ہے اور اس میں نیا کچھ بھی نہیں ہے۔ لوکل سیلف گورنمنٹ ڈپارٹمنٹ کے پرنسپل سکریٹری منجیت سنگھ نے کہا کہ حکومت وقفے وقفے سے غیرقانونی مسالخ کے خلاف کارروائی کرتی ہے۔ نوٹسیں دیئے جاتے ہیں اور لائسنس ؍ اجازت نامہ کے بغیر کام کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی جاتی ہے۔ اس سوال پر کہ آیا حکومت نے گزشتہ ایک ہفتے میں 16 غیرقانونی مسالخ بند کردیئے، منجیت نے اعداد و شمار کے افشاء سے انکار کیا۔ جئے پور میونسپل کارپوریشن بھی ایسے قصابوں اور میٹ شاپس کے خلاف سختی سے پیش آرہا ہے جن کے لائسنسوں کی تجدید نہیں ہوئی۔ جئے پور میئر اشوک لاہوتی نے کہا کہ ایسی شکایات سامنے آئیں کہ بعض لوگ اپنی دکانات میں جانوروں کو ذبح کررہے ہیں۔ کئی میٹ شاپس کے پاس مناسب لائسنس نہیں ، ہم ایسی تمام شکایات پر کارروائی کریں گے۔ جو دکانات شرائط و ضوابط کی تکمیل نہ کریں، ہم ان تمام کو بند کردیں گے۔

TOPPOPULARRECENT