Tuesday , October 17 2017
Home / ہندوستان / راجستھان میں بیف تنازعہ ، گوشت بیف نہیںمیٹ تھا:پولیس

راجستھان میں بیف تنازعہ ، گوشت بیف نہیںمیٹ تھا:پولیس

جئے پور ۔ /17 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) 4 کشمیری طلباء جنہیں ان افواہوں کے بعد حراست میں لے لیا گیا تھا کہ انہوں نے راجستھان کے علاقہ چتوڑ گڑھ کے اپنے ہاسٹل کے کمرے میں بیف پکایا تھا حراست میں لے لیا گیا تھا آج رہا کردیئے گئے ۔ پولیس نے کہا کہ ان کے قبضے سے جو گوشت برآمد کیا گیا وہ گائے کا نہیں ہے ۔ پولیس نے اس شخص کی نشاندہی کرلی ہے جس نے مبینہ طور پر واٹس اپ پر یہ افواہ پھیلائی تھی اور اس کیخلاف کارروائی کا آغاز کردیا گیا ہے۔ چار کشمیری طلباء کو اس افواہ کی بنا پر حراست میں لیا گیا تھا جنہیں سب ڈیویژنل مجسٹریٹ کی عدالت میں فی کس 25 ہزار روپئے کے شخصی مچلکہ پر رہا کردیا ۔ اس افواہ کی وجہ سے پیر کی رات صورتحال کشیدہ ہوگئی تھی ۔ یہ طلباء ایک خانگی یونیورسٹی میں زیرتعلیم ہیں ۔ انہوں نے الزام عائد کیا ہے کہ اس افواہ کے پھیلنے کے بعد بعض دیگر طلباء نے انہیں زدوکوب کیا تھا لیکن پولیس نے ان کشمیری طلباء کے قبضے سے بیف برآمد ہونے کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ جو گوشت برآمد کیا گیا وہ بیف نہیں میٹ ہے ۔ یونیورسٹی میں بیف کا پکوان کرنے پر احتجاجی مظاہرہ بھی کیا گیا تھا ۔ اس بات کی تصدیق قصاب سے بھی کی جاچکی ہے کہ یہ بیف نہیں تھا ۔ تاہم نمونے فارنسک لیباریٹری روانہ کئے گئے ہیں اور رپورٹ کا انتظار ہے ۔

TOPPOPULARRECENT