Wednesday , October 18 2017
Home / جرائم و حادثات / راجندر نگر میں مجلس اور ٹی آر ایس کارکنوں میں تصادم اور حملہ

راجندر نگر میں مجلس اور ٹی آر ایس کارکنوں میں تصادم اور حملہ

معمولی بات پر جھگڑا سیاسی ساکھ مضبوط بنانے مقامی جماعت کے کارکنوں کی غنڈہ گردی
حیدرآباد /9 مئی ( سیاست نیوز ) ملک میں حالات دن بہ دن خراب ہوتے جارہے ہیں اور قوم و ملت میں اتحاد کو ترجیح دینے اور اجتماعی کوششوں کے ذریعہ حالات کا مقابلہ کرنے و مسائل کی یکسوئی پر توجہ دینے کے بجائے سیاسی فائدہ کیلئے سیاسی رنجیشوں کے ذریعہ نااتفاقی پیدا کرنے کا سلسلہ ابھی تھمتا ہی نہیں ایک ایسا ہی واقعہ کل رات قائم نگر میں پیش آیا جو علاقہ میں خود و کشیدگی کا سبب بن گیا ۔ راجندر نگر کے علاقہ میں اپنی ساکھ کو برقرار رکھنے کیلئے مجلس اور اپنی گرفت کو مضبوط کرنے ٹی آر ایس دونوں پارٹی کے کارکنان آپس میں متصادم ہوگئے ۔ بتایا جاتا ہے کہ اس واقعہ میں کئی افراد زحمی ہوگئے ۔ مجلسی کارکنوں پر الزام ہے کہ انہوں نے ٹی آر ایس سے وابستہ اور پارٹی کیلئے کام کرنے والے کارکنوں کو بری طرح حملہ کا نشانہ بنایا اور اپنی مبینہ غنڈہ گردی کے ذریعہ خواتین کو بھی غنڈہ گردی کا نشانہ بنایا ۔ باوثوق ذرائع کے مطابق تیز رفتار موٹر سائیکل چلانے پر اعتراض کے بعد سے علاقہ میں حالات بگڑ گئے اور دیکھتے ہی دیکھتے ایک گروپ کی شکل میں مجلس کے کارکنوں نے ٹی آرایس کارکنوں پر حملہ کردیا ۔ زخمی کارکنوں کا الزام ہے کہ بہادرپورہ اور آس پاس کے علاقوں سے چند افراد جمع ہوگئے اور حملہ کردیا ۔ ٹی آر ایس کا الزام ہے کہ یہ حملہ منصوبہ بند طریقہ سے کیا گیا چونکہ کافی عرصہ سے اس علاقہ میں ٹی آر ایس کی سرگرمیوں کو روکنے کیلئے دباؤ ڈالا جارہا ہے ۔ اطلاع ملتے ہی ٹی آر ایس قائد و سٹ ون چیرمین مسٹر عنایت علی باقری قائم نگر پہونچ گئے اور حالات کا جائزہ لیا ۔ انہوں نے ٹی آر ایس کارکنوں پر حملہ کی سخت انداز میں مذمت کی اور اس مسئلہ کو پارٹی ہائی کمان سے رجوع کرنے کا ارادہ کیا اور دونوں پولیس کمشنرس سے مطالبہ کیا کہ وہ شہر میں حالات کو بگاڑنے کی کوشش کا سخت نوٹ لیں ۔ انہوں نے تشویش ظاہر کرتے ہوئے اس علاقہ میں عوامی خدمات پر اعتراض کیوں کیا جارہا ہے ۔ انہوں نے مجلس پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ وہ اس علاقہ میں اپنے گرفت کو مضبوط کرنے کیلئے ایسے حملہ کر رہا ہے ۔ سٹ ون کے چیرمین نے کہا کہ اس علاقہ میں ٹی آر ایس کافی عوامی مقبولیت رکھتی ہے اور علاقہ کے عوام کا بھروسہ اپنی خدمات کے ذریعہ جتنے میں کامیاب ہوئی ۔ انہوں نے خاطیوں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا ۔ اس سلسلہ میں پولیس انسپکٹر راجندر نگر مسٹر امریندر نے بتایا کہ دونوں گروپس کی شکایت پر مقدمات درج کرلئے گئے ہیں ۔ انہوں نے ریوالور کی بات کو بے بنیاد قرار دیا اور کہا کہ تین افراد اس واقعہ میں زحمی ہوگئے ۔ انہوں نے بتایا کہ علاقہ میں حالات معمول پر ہیں ۔ تاہم پولیس نے چوکسی اختیار کئے ہوئے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT