Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / راجہ سنگھ کیخلاف دبیرپورہ پولیس میں شکایت

راجہ سنگھ کیخلاف دبیرپورہ پولیس میں شکایت

مسلمانوں کے جذبات مجروح، رام نومی جلوس میں بی جے پی رکن اسمبلی کی تقریر، امجداللہ خان کا بیان
حیدرآباد 9 اپریل (پریس نوٹ) مسلمانوں کے خلاف بی جے پی رکن اسمبلی راجہ سنگھ کی اشتعال انگیزی اور مسلمانوں کے جذبات مجروح کئے جانے والے نعروں کے خلاف ترجمان ایم بی ٹی امجداللہ خان خالد نے آج دبیرپورہ پولیس اسٹیشن میں انسپکٹر مسٹر وینکنا نائک سے ملاقات کرتے ہوئے راجہ سنگھ کے خلاف شکایت درج کرواتے ہوئے انھیں راجہ سنگھ کی جانب سے کئے گئے تقاریر پر مشتمل CD حوالے کی اور تحقیقات کا مطالبہ کیا۔ خالد نے کہاکہ 5 اپریل کو حیدرآباد میں رام نومی جلوس کے موقع پر بی جے پی رکن اسمبلی راجہ سنگھ نے دھول پیٹ تا سلطان بازار کے درمیان میں تقریباً 10 مقامات پر مسلمانوں کے خلاف اشتعال انگیز تقاریر کرتے ہوئے ملک بھر کے مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کیا ہے۔ راجہ سنگھ نے اپنی تقریر میں مسلمانوں کو للکارتے ہوئے کہاکہ دنیا کی کوئی طاقت رام مندر کی تعمیر میں رکاوٹ پیدا نہیں کرسکتی۔ امجداللہ خان خالد نے کہاکہ اس طرح کئی  دیگر نعروں کے ذریعہ راجہ سنگھ نے مسلمانوں میں نہ صرف اشتعال پیدا کیا بلکہ مسلمانوں کے جذبات کو بُری طرح مجروح کرتے ہوئے مسلمانوں کا استحصال کیا۔ جلوس اور مذہبی منافرت پھیلانے والی تقاریر کے موقع پر نہ صرف سٹی کمشنر پولیس مسٹر مہندر ریڈی بلکہ ٹاسک فورس کے اسپیشل فورس کے ڈی سی پیز کے علاوہ بھاری پولیس عملہ بھی موجود تھا۔ لیکن حیرت کی بات ہے کہ پولیس کی جانب سے راجہ سنگھ کی تقاریر کے موقع پر خاموشی نہ صرف معنی خیز ہیں بلکہ مسلمانوں کے لئے لمحہ فکر و سوالیہ نشان بھی ہیں۔ امجداللہ خان خالد نے کہاکہ اگر راجہ سنگھ لب کشائی سے گریز نہیں کرے گا تو پھر اس کے خمیازہ کے لئے بھگتنے کے لئے تیار رہنا پڑے گا۔ انھوں نے کہاکہ حیدرآباد کی تہذیب صدیوں پرانی ہے جہاں پر ہندو مسلم بھائی چارگی کی فضاء سے ملک بھر معطر ہے اگر راجہ سنگھ پرامن فضاء کو مکدر کریں گے تو انھیں سیکولر ہندو اور مسلمان بھائی اچھی طرح سبق سکھانا جانتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT