Monday , August 21 2017
Home / سیاسیات / راشٹریہ لوک سمتا پارٹی کے رکن پارلیمنٹ اور اسمبلی معطل

راشٹریہ لوک سمتا پارٹی کے رکن پارلیمنٹ اور اسمبلی معطل

پٹنہ، 19 اگست (سیاست ڈاٹ کام) راشٹریہ لوک سمتا پارٹی (آرایل ایس پی) کی مرکزی قیادت نے بہار کے جہان آباد سے پارٹی کے ایم پی ارون کمار اور ایم ایل اے للن پاسوان کو آج پارٹی سے معطل کر دیا۔ پارٹی کے قومی جنرل سکریٹری وترجمان فضل امام ملک نے آج یہاں بتایا کہ مینجمنٹ کمیٹی کے صدر اور پارٹی کے سیتامڑھی سے ممبر پارلیمنٹ رام کمار شرما کی سفارش پر آرایل ایس پی کی قومی کمیٹی نے یہ فیصلہ کیاہے ۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی مخالف سرگرمیوں میں ملوث رہنے کی وجہ سے رکن پارلیمنٹ مسٹر کمار اور ایم ایل اے مسٹر پاسوان کو فوری طور پر معطل کیا گیا ہے ۔مسٹر ملک نے بتایا کہ ان دونوں رہنماؤں کے علاوہ پارٹی مخالف سرگرمیوں میں ملوث رہنے کی وجہ سے پارٹی کے سابق قومی جنرل سکریٹری ونود کشواہا کو برخاست کر دیا گیا ہے ۔ مسٹر کشواہا نے پارٹی کے قومی جنرل سکریٹری کے عہدے سے استعفی دے دیا تھا جسے پہلے ہی قبول کر لیا گیا تھا۔مسٹر کمار جہان آباد سے پارٹی کے ممبر پارلیمنٹ ہیں جبکہ مسٹر پاسوان سہسرام ضلع کے چناري (ریزرو) سے رکن اسمبلی ہیں۔ آر ایل ایس پی میں پارٹی کے دو رکن اسمبلی ہیں جن میں مسٹر پاسوان ایم پی مسٹر کمار کے ساتھ ہیں جبکہ مدھوبنی ضلع کے ھرلاکھي کے ممبر اسمبلی سدھانشو شیکھر پارٹی کے قومی صدر اور مرکزی وزیر اپیندر کشواہا کے خیمے میں ہیں۔بہار اسمبلی انتخابات کے بعد سے پارٹی میں چل رہی رسہ کشی کے درمیان گزشتہ 30 جون کو پارٹی کے قومی صدر اور مرکزی وزیر مسٹر کشواہا کی صدارت میں قومی کمیٹی کی دہلی میں ہوئی میٹنگ میں پارٹی کی بہار یونٹ کو فوری طور پر تحلیل کر دیا گیا تھا۔ ساتھ ہی بہار یونٹ کا الیکشن دو ماہ میں کرانے کا فیصلہ لیا گیا تھا۔جہان آباد کے ایم پی مسٹر کمار بہار یونٹ کے صدر کے عہدے پر تھے اور پارٹی کی اس کارروائی سے وہ ناراض چل رہے تھے ۔اسی کو لے کر دو روز قبل مسٹر کمار اور ان کے حامیوں نے پٹنہ میں پارٹی کے کارکنوں کی میٹنگ بلائی تھی۔ اس اجلاس میں مسٹر کشواہا کو ہی قومی صدر کے عہدے سے ہٹا دیا گیا اور مسٹر کمار کو قومی صدر قرار دیا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT