Tuesday , July 25 2017
Home / ہندوستان / رامپور سی آر پی ایف کیمپ پر حملہ، مقدمہ کی جلد تکمیل کیلئے درخواست

رامپور سی آر پی ایف کیمپ پر حملہ، مقدمہ کی جلد تکمیل کیلئے درخواست

 

ممبئی11 جولائی(سیاست ڈاٹ کام )اتر پردیش کے رامپور شہر میں واقع سی آر پی ایف کیمپ پر ہوئے دہشت گردانہ معاملے کی سماعت متعین کردہ مدت میں نہ کئے جانے کے خلاف عرضداشت داخل کی ہے جس پر سماعت عمل میںآئی جس کے دوران جسٹس سدھیر اگرووال نے استغاثہ سمیت نچلی عدالت سے مقدمہ کی متعین کردہ مدت میں سماعت مکمل نہ کئے جانے کے تعلق سے اپنا جواب24 جولائی کو داخل کرنے کا حکم دیا ہے ۔واضح رہے کہ الہ آباد ہائی کورٹ نے جمعیت علماء کے توسط سے داخل کردہ عرضداشت پر 16 اکتوبر2105 کو فیصلہ صادر کرتے ہوئے رامپور کی نچلی عدالت کو مقدمہ کی سماعت تین ماہ کے اندرمکمل کئے جانے کے احکامات جاری کئے تھے لیکن ایک طویل وقفہ گذر جانے کے باوجود استغاثہ کی عدم دلچسپی کی وجہ سے معاملہ جوں کو توں ہے جس کی وجہ جیل میں مقید ملزمین اور ان کے اہل خانہ شدید بے چینی کا شکارہیں۔ملزمین کو قانونی امداد فراہم کرنے والی تنظیم جمعیت علماء مہاراشٹر (ارشد مدنی) قانونی امداد کمیٹی کے سربراہ گلزاراعظمی نے ممبئی میں اخبارنویسوں کو بتایا کہ الہ آباد ہائی کورٹ میں عرضداشت داخل کرکے مقدمہ کی سماعت جلد مکمل کئے جانے اور ہائی کورٹ کے حکم کی خلاف ورزی کے خلاف استغاثہ کے رویہ کی شکایت اور اس پر کارروائی کرنے کی گذارش کی گئی ہے ۔گلزار اعظمی نے بتایا کہ عرضداشت کی سماعت کے دوران دفاعی وکلا نے عدالت کو بتایا کہ20 جولائی2016 کے بعد سے ابتک عدالت میں استغاثہ نے کوئی بھی سرکاری گواہ پیش نہیں کیا ہے بلکہ معاملے کی ہر سماعت پر ٹال مٹول کا مظاہرہ کرتے ہوئے عدالت سے وقت طلب کیا گیا۔دوران سماعت عدالت کو بتایا گیا کہ ابتک 38 سرکاری گواہوں کے بیانات کا اندراج مکمل ہوچکا ہے اور مزید 24گواہوں کی گواہیاں باقی لیکن گذشتہ ایک سال سے استغاثہ نے عدالت میں کوئی بھی سرکاری گواہ پیش نہیں کیا ، حالانکہ اس معاملے میں بیشتر سرکاری گواہ پولس افسران ہیں اس کے باوجود ان کی گواہی عمل میں نہیںآرہی جس سے ملزمین سخت ذہینی پریشانی میں مبتلا ہیں اور انہوں نے اس تعلق سے الہ آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس سمیت سپریم کورٹ کو بھی درخواستیں روانہ کی ہیں۔عیاں رہے کہ سی آرپی ایف کیمپ رام پور میں31دسمبر 2007کوایک واقعہ پیش آیا تھا جسمیں سات سی آرپی ایف کے جوان اور ایک اجنبی شخص اس فا ئر نگ میں ہلاک ہو ئے تھے نیز حملہ آور کو ن تھے کسی کو معلوم نہیں ہیں بلکہ کچھ دنوں کے بعد اس مقدمہ میں رام پور ،مراداباد،اور ممبئی سے آٹھ ملز مین کو گرفتار کیا گیا جن میں عمران شہزاد ،محمد فاروق ،صباح الدین ،محمد شر یف ،جنگ بہادر،محمد قیصر،گلاب خان ،فہیم انصاری جس شامل ہیں۔

 

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT