Thursday , September 21 2017
Home / ہندوستان / رام مندر عقیدہ کا مسئلہ، یو پی انتخابات کا موضوع نہیں

رام مندر عقیدہ کا مسئلہ، یو پی انتخابات کا موضوع نہیں

ایک پارٹی کی ایک خاندان اور دوسری کی ذات پات کے اطراف گردش کا الزام

لکھنؤ ۔ 12 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) رام مندر عقیدہ کا مسئلہ ہے۔ 2017ء کے یوپی اسمبلی انتخابات کا موضوع نہیں۔ یہ انتخابات ترقی کے ایجنڈہ پر لڑے جائیں گے۔ پارٹی کے نئے ریاستی صدر کیشوپرساد موریا نے آج پارٹی آفس میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پہلا مقصد ریاست کو ایس پی اور بی ایس پی سے چھٹکارا دلانا ہے۔ 403 رکنی اسمبلی میں 265 سے زیادہ نشستیں حاصل کرنا ہے۔ ایس پی اور بی ایس پی پر تنقید کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ایک پارٹی ایک ہی خاندان کے افراد گردش کرتی ہے جبکہ دوسری کا محور ذات پات ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کی کوشش ہیکہ ریاست کو ترقی کے راستہ پر لے جائے۔ ہم اس بات کو یقینی بنائیں گے کہ مرکزی حکومت کی اسکیمیں ہر مستحق شخص تک پہنچ سکیں۔ بی جے پی کے چیف منسٹری کے امیدوار کے بارے میں سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس کا فیصلہ مرکزی قیادت کرے گی۔ انہوں نے سماج وادی پارٹی حکومت پر تمام محاذوں پر ناکام رہنے کا الزام عائد کیا۔ انہوں نے کہا کہ اگر بی جے پی کے بھی کارکن کو ہراساں کیا جائے تو وہ اسے برداشت نہیں کریں گے بلکہ اس کے خلاف جدوجہد کریں گے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT