Saturday , September 23 2017
Home / سیاسیات / رام مندر مسئلہ پر حکومت سپریم کورٹ کے فیصلے کے مطابق کام کریگی

رام مندر مسئلہ پر حکومت سپریم کورٹ کے فیصلے کے مطابق کام کریگی

موافق مندر زعفرانی قائدین کے بیانات کی اہمیت نہیں۔ جی ایس ٹی بل پر کانگریس پر تنقید ۔مرکزی وزیر رام ولاس پاسوان

بنگلورو 18 جنوری ( سیاست ڈاٹ کام ) مرکزی وزیر رام ولاس پاسوان نے آج کہا کہ این ڈی اے حکومت رام مندر کے مسئلہ پر سپریم کورٹ کی فیصلے کی بنیادوں پر عمل کریگی نہ کہ موافق رام مندر زعفرانی قائدین کے بیانات کی مطابقت میں۔ لوک جن شکتی پارٹی لیڈر نے رام مندر مسئلہ پر ان کی پارٹی اور بی جے پی میں تعلقات خراب ہونے کا امکان مسترد کردیا اور کہا کہ حکومت سپریم کورٹ کے فیصلے کی بنیاد پر کام کریگی ۔ پاسوان نے یہاں میڈیا سے کہا کہ وزیراعظم کی سیاست ترقی کے اطراف گھومتی ہے نہ کہ رام مندر ‘ بابری مسجد یا یکساں سیول کوڈ جیسے متنازعہ مسائل پر توجہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے اپنے اب تک کے دور اقتدار میں ایک مرتبہ بھی رام مندر ‘ بابری مسجد ‘ یکساں سیول کوڈ یا دفعہ 370 جیسے مسائل پر اظہار خیال نہیں کیا ہے ۔ وزْر اعظم کا مقصد یہ ہے کہ ملک میں ترقی ہو ۔ ان کا مقصد یہ ہے کہ نوجوانوں میں بے چینی کس طرح دور کی جائے ۔ کس طرح سے ہندوستان کا امیج بین الاقوامی سطح پر مستحکم کیا جائے ۔ اب تک جو اچھے کام مودی نے انجام دئے ہیں وہ کسی اور وزیر اعظم نے انجام نہیں دئے ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں انہں نے کہا کہ رام مندر مسئلہ پر نریندر مودی کا امیج متاثر ہونے اور ان کی پارٹی اور بی جے پی کے مابین تعلقات خراب ہونے کا کوئی امکان نہیں ہے ۔ انہوں نے ادعا کیا کہ این ڈی اے حکومت اس مسئلہ پر سپریم کورٹ کے فیصلے کے مطابق کام کریگی نہ کہ زعفرانی قائدین بشمول پروین توگاڑیہ کے موافق مندر بیانات کی بنیاد پر ۔ ایک اور سوال کے جواب میں پاسوان نے کہا کہ کانگریس نائب صر کو جی ایس ٹی بل میں ٹیکس کے تناسب کی حد کا تعین کرنے کا مطالبہ کرنے کا کوئی حق نہیں ہے کیونکہ ایک دہے طویل یو پی اے اقتدار میں اس تعلق سے کچھ بھی نہیں کیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی راجیہ سبھا میں دستیاب عددی طاقت کا جی ایس ٹی بل کو روکنے کیلئے بیجا استعمال کر رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس بل کو گذشتہ سال ہی منظور ہوجانا چاہئے تھا ۔ راجیہ سبھا میں کانگریس کو اکثریت حاصل ہے اور اس موقف کا بیجا استعمال کیا جا رہا ہے تاکہ جی ایس ٹی بل کو تعطل کا شکار کیا جائے ۔ اس سوال پر کہ جی ایس ٹی تعطل کی وجہ سے کانگریس کا امیج زیادہ متاثر ہو رہا ہے یا نریندر مودی کا ‘ انہوں نے کہا کہ کانگریس سے زیادہ ملک کا امیج متاثر ہو رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس نائب صدر راہول گاندھی نے اسٹارٹ اپ انڈیا مہم کو ملک میں عدم رواداری کے مسئلہ سے جو جوڑنے کی کوشش کی ہے وہ غیر منصفانہ ہے ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ یہ کوشش کچھ اور نہیں بلکہ اسٹارٹ اپ انڈیا مہم سے عوام کی توجہ ہٹانے کی کوشش ہے کیونکہ اس مہم سے ملک کے عوام بشمول دلتوں ‘ کسانوں اور غریب عوام کو فائدہ ہوتا ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ملک میں عدم رواداری جیسا کوئی مسئلہ نہیں ہے اور اپوزیشن جماعتیں سیاسی فائدہ حاصل کرنے یہ مسئلہ اٹھا رہی ہیں۔ بہار کی صورتحال سے متعلق سوال پر پاسوان نے ادعا کیا کہ جے ڈی یو ۔ آر جے ڈی اتحاد کی حکومت دو سال میں زوال کا شکار ہوجائیگی کیونکہ نتیش کمار اورلالو پرساد یادو کے مابین اختلافات ہیں۔

TOPPOPULARRECENT