Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / رام مندر مسئلہ پر مصالحت کیلئے تیار ہوں ‘ روی شنکر

رام مندر مسئلہ پر مصالحت کیلئے تیار ہوں ‘ روی شنکر

یکساں سیول کوڈ کے مسئلہ پر عملی سوچ ضروری ۔ آرٹ آف لیونگ کے بانی کا خیال
حیدرآباد 5 نومبر ( پی ٹی آئی ) روحانی رہنما اور آرٹ آف لونگ کے بانی سری سری روی شنکر نے آج کہا کہ وہ رام مندر مسئلہ میں مصالحت کیلئے تیار ہیں تاکہ اس مسئلہ کو حل کیا جاسکے ۔ انہوں نے میڈیا سے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ یقینا وہ ہمیشہ ہی اسی بھی جگہ مصالحت کیلئے تیار ہیں۔ ان سے سوال کیا گیا تھا کہ آیا وہ دیرینہ حل طلب بابری مسجد ۔ رام مندر مسئلہ میں فریقین کے مابین مصالحت کی کوشش کیلئے تیار ہیں۔ انہوںنے ہند ۔ پاک کے مابین بڑھتی ہوئی کشیدگی کے تعلق سے دونوں ملکوں کے مابین عوام تا عوام رابطوں کو فروغ دینے کی بھی پیشکش کی تاہم کہا کہ وہ اس مسئلہ میں اس سے زیادہ کچھ نہیں کرسکتے ۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے مابین عوام تا عوام بہترین رابطے ہیں۔ انہوں نے واضح کیا کہ آرٹ آف لیونگ کے پاکستان میں چار مختلف شہروں میں مراکز ہیں جہاں 10,000 افراد اس کے پروگرام پر عمل کرتے ہیں اور مستفید ہوتے ہیں۔ روی شنکر نے کہا کہ آرٹ آف لیونگ کی جانب سے پاکستان میں سیلاب کے دوران عوام میںغذا بھی تقسیم کی گئی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ عوام تا عوام رابطے مختلف ہیں تاہم سیاست ایک الگ چیز ہے ۔ ایسے میں وہ نہیں جانتے کہ وہ سیاسی مسئلہ میں کیا کچھ کرسکتے ہیں۔ یہ ان کے بس کی بات نہیں ہے لیکن عوام تا عوام رابطوں کی بات ہے تو یقینا وہ ایسا کام کرسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہر سال 300 تا 400 افراد پاکستان سے بنگلورو میں ہمارے آشرم کو آتے ہیں اور تربیت پاتے ہیں۔ روی شنکر تین مرتبہ پاکستان کا دورہ کرچکے ہیں اور وہاں انہیں بہتر عوامی رد عمل حاصل ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ عوام تا عوام رابطوں کو بہتر بنانے کیلئے یقینی طور پر ہم بہت کچھ کرسکتے ہیں۔ لیکن وہ نہیں سمجھتے کہ آئی ایس آئی ‘ فوج اور حکومت کے ساتھ وہ کچھ کرسکتے ہیں۔ یہ کام صرف حکومت کرسکتی ہے ۔ اس سوال پر کہ آیا وہ ملک میں یکساں سیول کوڈ کو ضروری سمجھتے ہیں روی شنکر نے کہا کہ وہ چاہتے ہیں کہ لوگ عملی طور پر سوچیں اور ترقی کے انداز کو اختیار کریں۔ سماجی سائینسدانوں کے خیالات کا بھی اس میں خیال رکھنے کی ضرورت ہے ۔

TOPPOPULARRECENT