Tuesday , July 25 2017
Home / ہندوستان / رام مندر کی تعمیر اور گائے کی حفاظت پر اب کوئی بہانہ نہیں

رام مندر کی تعمیر اور گائے کی حفاظت پر اب کوئی بہانہ نہیں

گودھرا نہیں ہوتا تو نریندر مودی آج وزیراعظم نہ ہوتے، شنکراچاریہ نشچلانند کا ریمارک

چتوڑگڑھ، 13 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) پوری پیٹھ کے آدی گرو شنکراچاریہ سوامی نشچلانند نے ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر اور ملک میں گائے کی حفاظت کے معاملے پر کہا کہ بی جے پی رام بھکتوں کی حمایت سے اقتدار میں آئی ہے ایسے میں اب کوئی بہانہ نہیں چلے گا۔ شنکراچاریہ نے آج یہاں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے رام مندر اور گائے کی حفاظت کے سوال پر کہا کہ بی جے پی کے رہنما لال کرشن اڈوانی اور اٹل بہاری واجپائی رام رتھ پر سوارہوکر اقتدار میں آئے اور گودھرا نہیں ہوتا تو موجودہ وزیر اعظم نریندر مودی اتنے برسوں تک اکثریت سے نہ گجرات کے وزیر اعلی ہوتے اور نہ ہی آج وزیر اعظم ہوتے ۔ سابق وزیر اعظم واجپائی کے پاس اقلیت کی حکومت ہونے کا بہانہ تھا لیکن مودی کے پاس کوئی بہانہ نہیں ہے اور وہ اکثریت کی حکومت چلا رہے ہیں تو اب ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر وہ کروائیں ورنہ پھر سے تحریک ہوگی اور مندر تعمیر ضرور ہوگا۔ انہوں واجپائی حکومت میں رام جنم بھومی پر ہوئی کھدائی کو مستند قرار دیتے ہوئے مندر کی تعمیر میں رکاوٹ بنے سیاستدانوں پر بھی تنقید کی۔ انہوں نے کہا کہ گائے کی حفاظت کے لئے آواز اٹھانے والوں کو غدار بتانا بند کریں۔ انہوں نے کہا کہ جب ویٹیکن سٹی میں عیسائی کمیونٹی کے سب سے بڑے عالم دین رہنے کی وجہ سے اسے ملک کے دارالحکومت قرار دیا جا سکتا ہے تو دنیا کو سائنس دینے والے شنکراچاریہ کی چاروں پیٹھو کو مذہبی دارالحکومت قرار کیوں نہیں دیا گیا ہے۔ یہ ہندو معاشرے کے لئے دکھ کا باعث ہے ۔ انہوں نے دلائی لامہ کو روحانی گرو بتاتے ہوئے کہا کہ آج وہ بھی اپنے مقام کے اعلی ترین عہدے پر نہیں ہیں۔ شنکراچاریہ نے جواہر لال نہرو سے لے کر اندرا گاندھی، سونیا گاندھی، رابرٹ واڈرا، وسندھرا راجے اور ملائم سنگھ پر بھی ہندو مذہب کو تباہ کرنے کے حوالہ سے سخت طنز کئے ۔

 

نیوز چینل کا فرقہ پرست
عہدیدار گرفتار
لکھنو۔13 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) ایک نیوز چینل کے ایڈیٹر ان چیف اور چیف منیجنگ ڈائرکٹر کو سنبھل کے مختلف گروپوں کے درمیان مبینہ طور پر دشمنی پیدا کرنے کی پاداش میں گرفتار کرلیا گیا ہے، ایک سینئر پولیس عہدیدار نے آج یہ بات بتائی۔ انہوں نے کہا کہ سریش چوہان کو گزشتہ رات سنبھل پولیس نے چودھری چرن سنگھ ایرپورٹ سے مقامی پولیس کی مدد کے ساتھ گرفتار کیا جب وہ شہر چھوڑکر روانہ ہونے والا تھا۔ سدرشن نیوز چینل کے سربراہ سریش کے خلاف آئی پی سی کے مختلف دفعات کے تحت ایف آئی آر درج کرلیا گیا ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT