Friday , August 18 2017
Home / شہر کی خبریں / راہول گاندھی کا راستہ روکنے بی جے پی کی کوشش

راہول گاندھی کا راستہ روکنے بی جے پی کی کوشش

کئی کارکن گرفتار، نائب صدر کانگریس کے دورہ یونیورسٹی پر کشن ریڈی کا اعتراض
حیدرآباد /19 جنوری (سیاست نیوز) کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی کے خلاف راستہ روکو احتجاج کرنے والے اے بی وی پی اور بی جے پی کارکنوں کو گرفتار کرلیا گیا۔ واضح رہے کہ راہول گاندھی آج بیگم پیٹ ایرپورٹ سے براہ راست سنٹرل یونیورسٹی کے دورہ پر پہنچے اور جب وہ وہاں سے باہر نکلے تو اے بی وی پی اور بی جے پی کے کارکنوں نے ان کا راستہ روکنے کی کوشش کی، جس کو پولیس نے ناکام بناکر احتجاجیوں کو حراست میں لے لیا۔ اس موقع پر تلنگانہ بی جے پی کے صدر جی کشن ریڈی نے روہت کی خودکشی سے مرکزی وزیر بنڈارو دتاتریہ کا کوئی تعلق ہونے کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ راہول گاندھی یونیورسٹی کیمپس کا دورہ کرکے خودکشی کے واقعہ کو سیاسی رنگ دینا چاہتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ورنگل میں کانگریس کے سابق رکن پارلیمنٹ راجیا کی قیامگاہ پر دل سوز واقعہ پیش آیا، جس میں ان کی بہو اور دو کمسن بچے ہلاک ہوئے، تاہم راہول گاندھی انھیں دیکھنے یا ان کے ارکان خاندان کو پرسہ دینے نہیں آئے، لیکن اب سیاسی مفاد کے لئے انھوں نے یونیورسٹی کا دورہ کیا۔ انھوں نے کہا کہ ماضی میں حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی کے 35 طلبہ کو معطل کیا گیا تھا، مگر اس موقع پر مرکزی حکومت کو ذمہ دار قرار نہیں دیا گیا۔ انھوں نے کہا کہ یونیورسٹی ایک خود مختار ادارہ ہے، جسے فیصلہ کرنے کا مکمل اختیار ہے۔ جس طرح ماضی میں 35 طلبہ کو معطل کیا گیا تھا، اسی طرح اب یونیورسٹی نے پانچ طلبہ کو معطل کیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ ملک کے غدار یعقوب میمن کو عدلیہ کے احکام پر جب پھانسی دی گئی تو فیس بک پر میمن کی تائید میں کمنٹس کے خلاف اے بی وی پی کے طلبہ نے استفسار کیا تھا، جس کے بعد یہ معاملہ طول پکڑگیا۔

TOPPOPULARRECENT