Wednesday , July 26 2017
Home / Top Stories / راہول گاندھی کی سہارنپور سرحد پر متاثرین سے ملاقات

راہول گاندھی کی سہارنپور سرحد پر متاثرین سے ملاقات

ٹاون میں داخلہ سے روکدیا گیا ، ملک بھر میں دلتوں کو کچلنے کا الزام

سہارنپور ۔ 27 ۔ مئی : ( سیاست ڈاٹ کام ) : راہول گاندھی نے سہارنپور میں ذات پات پر مبنی جھڑپوں کے متاثرین اور ان کے ارکان خاندان سے ضلع کی سرحد پر ملاقات کی کیوں کہ حکام نے تشدد سے متاثرہ علاقہ میں انہیں جانے کی اجازت سے انکار کردیا تھا ۔ کانگریس لیڈر پی ایل پنیا جو اس دورہ میں راہول گاندھی کے ہمراہ تھے بتایا کہ نائب صدر نے متاثرین سے وعدہ کیا کہ وہ ان کے ساتھ انصاف کے لیے جدوجہد کریں گے ۔ بعدازاں راہول گاندھی نے ٹوئٹ کیا کہ انتظامیہ نے مجھے یو پی سرحد پر روکنے کی کوشش کی لیکن میں نے شاہجہاں پور چوکی ، سہارنپور جاکر متاثرہ خاندانوں سے ملاقات کی ۔ انہوں نے کہا کہ آج ہندوستان میں غریبوں اور کمزوروں کے لیے کوئی جگہ نہیں ہے ۔ دلتوں کو کچلا اور دبایا جارہا ہے ۔ یہ صورتحال صرف یو پی نہیں بلکہ سارے ملک میں ہے ۔ راہول گاندھی نے ضلع انتظامیہ سے تشدد کے مقدمات کی غیر جانبدارانہ تحقیقات کرنے کی اپیل کی ۔ انہوں نے کہا کہ امن و بھائی چارگی کے لیے اقدامات کئے جانے چاہئے ۔ ضلع انتظامیہ نے راہول گاندھی کو تشدد سے متاثرہ علاقہ کا دورہ کرنے کی اجازت نہیں دی اور سہارنپور سرحد پر انہیں کافی سیکوریٹی انتظامات کے ساتھ روکدیا گیا۔ قبل ازیں کانگریس ترجمان رندیپ سرجیوالا نے کہاکہ حکام غریبوں، دلتوں اور اِس ملک کے آدی واسیوں کی آواز کو دبا نہیں سکتے۔ راہول گاندھی اور کانگریس پارٹی اپنی آواز اُٹھاتے رہیں گے۔ کوئی بھی راہول کو تشدد کے متاثرین تک پہونچنے سے روک نہیں پائے گا۔ جبکہ یہ متاثرین بی جے پی غنڈوں کے ظلم کا شکار ہوئے ہیں۔ سہارنپور میں جاریہ ماہ ذات پات پر مبنی بڑے پیمانے پر جھڑپیں پیش آئی ہیں۔ سہارنپور میں تشدد سب سے پہلے تقریباً 40 یوم قبل امبیڈکر جینتی کے موقع پر منعقدہ جلوس کے دوران پیش آیا تھا۔ 5 مئی کو پیش آئی جھڑپوں میں ایک شخص ہلاک ہوا اور 15 دیگر زخمی ہوئے۔ اِن جھڑپوں میں ٹھاکروں نے شبیرپور میں دلتوں کے مکانات جلاڈالے۔ تقریباً ایک درجن پولیس گاڑیاں بھی نذر آتش کی گئیں اور 9 مئی کو 12 پولیس ملازمین زخمی ہوئے۔ 23 مئی کو ایک اور شخص گولی لگنے سے فوت ہوا اور دو دیگر کو زخم آئے جس کے بعد حکومت نے ایس ایس پی اور ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ کو معطل کیا اور ڈیویژنل کمشنر نیز ڈپٹی انسپکٹر جنرل آف پولیس کے تبادلے کردیئے۔ مرکز نے سہارنپور میں کشیدہ حالات سے نمٹنے کے لئے 400 رکنی اینٹی ریاٹ پولیس اسکواڈ بھیجا ہے۔
گنگا ندی سب کی ’ماں ‘ توہین غداری کے مترادف : ادتیہ ناتھ
وارناسی ۔ 27 ۔ مئی : ( سیاست ڈاٹ کام) : چیف منسٹر اترپردیش یوگی ادتیہ ناتھ نے کہا کہ گنگا ندی ’ سناتن سنسکرتی ‘ کی علامت ہے اور ہر ایک کی ماں ہے ۔ اس کی توہین ملک سے غداری کے مترادف ہے ۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ جن ریاستوں سے یہ ندی گزرتی ہے ان کے عدم تعاون کی وجہ سے آلودگی کی سطح سب سے زیادہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر گنگا اور جمنا ندی خشک ہوجائیں تو اترپردیش ریاست ریگستان میں تبدیل ہوجائے گا ۔ انہوں نے مزید آلودگی سے بچانے کے لیے اس میں سکے ، ملبوسات ، پھول اور دیگر اشیاء نہ پھینکنے کی خواہش کی ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT