Tuesday , September 26 2017
Home / Top Stories / راہول گاندھی کے الزامات کا وزیراعظم جواب دیں : لالوپرساد یادو

راہول گاندھی کے الزامات کا وزیراعظم جواب دیں : لالوپرساد یادو

RJD Chief Lalu Prasad Yadav talks to media after the Party's legislatives meeting in Patna on Friday, Nov 13,2015. Express Photo By Prashant Ravi

نوٹ بندی کے بعد ملک میں معاشی ترقی غائب، صدر آر جے ڈی کا بیان، غیر جانبدارانہ تحقیقات کی جائے: یچوری
پٹنہ/نئی دہلی۔22 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) صدر آر جے ڈی لالوپرساد یادو نے آج مطالبہ کیا ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی کو راہول گاندھی کی جانب سے ان کے خلاف عائد کردہ مبینہ رشوت ستانی کے الزامات کا جواب دینا چاہئے جبکہ انہوں نے نریندر مودی کو نوٹ بندی اقدام کے بعد لاپتہ معیشت کے لئے انکل پوزر قرار دیا۔ سپریم کورٹ کی نگرانی میں ان الزامات کی تحقیقات کرانے کا مطالبہ کرتے ہوئے صدر آر جے ڈی نے کہا کہ نریندر مودی کے خلاف راہول گاندھی نے جو الزامات عائد کئے ہیں، غور طلب ہیں۔ مودی پر الزام ہے کہ انہوں نے بڑے تاجروں سے بھاری رقم حاصل کی ہے۔ انہوں نے تاریخ کے ساتھ رقم حاصل کرنے کی تفصیلات بھی دی ہیں اور کہا ہے کہ یہ آدائیگیاں کس طریقہ سے کی گئی تھیں۔ وزیراعظم کو راہول گاندھی کے خلاف ہتک عزت کا کیس بھی داخل کرنا چاہئے۔ اگر رہول گاندھی کے الزامات غلط ہیں تو انہیں ایسا کرنے میں کوئی قباحت نہیں ہونی چاہئے۔ وزیراعظم کو ان الزامات کی تحقیقات کرانے کے لئے سپریم کورٹ کی نگرانی میں ازخود اعلان کیا جانا چاہئے۔ ناقص منصوبہ کے ساتھ نوٹ بندی کا اعلان کرنے کے لئے وزیراعظم مودی پر شدید تنقید کرتے ہوئے لالو پرساد نے نریندر مودی کو انکل پوزر قرار دیا۔

ان کے اقدام نے ملک میں معیشت کو درہم برہم کردیا ہے اور یہ ملک انارکی کی جانب بڑھ رہا ہے۔ نوٹ بندی کا فیصلہ فلاپ ہوچکا ہے۔ اس انارکی پر جو لوگ آواز اٹھارہے ہیں انہیں غدار قرار دیا جارہا ہے۔ وارانسی میں وزیراعظم نریندر مودی کے اپنے حریفوں کے خلاف دیئے گئے بیان پر انہوں نے کہا کہ نریندر مودی اپنے فیصلے کی حمایت کرنے والوں کو حب الوطن قرار دے رہے ہیں اور مخالفت کرنے والوں کو غدار بتارہے ہیں۔ لالوپرساد یادو نے جن پارٹی نے پہلے ہی کرنسی منسوخی کے خلاف دھرنا دینے کا اعلان کیا ہے اور وہ 28 ڈسمبر کو بہار کے ضلع ہیڈکوارٹرس پر دھرنا دیں گے اور پٹنہ میں گاندھی میدان پر ایک جلسہ عام سے خطاب کریں گے۔ ریالی سے پہلے وہ ریاست کا دورہ کریں گے۔ لالو پرساد نے دعوی کیا کہ ان کی اس ریالی کو چیف منسٹر نتیش کمار کی تائید حاصل ہے۔ نتیش کمار خود بھی 30 ڈسمبر کے بعد نوٹ بندی کے اقدامات کا جائزہ لیں گے۔ اس مسئلہ پر بہار عظیم اتحاد میں کوئی دراڑ پائی نہیں جاتی۔

اسی دوران سی پی آئی ایم کے لیڈر سیتارام یچوری نے بھی نریندر مودی پر تنقید کی اور نوٹ بندی پر اپوزیشن کے خلاف ان کے ریمارکس کو مسترد کردیا۔ انہوں نے کہا کہ ان کے خلاف جو سنگین الزامات عائد کئے گئے ہیں ان کی غیرجانبدارانہ تحقیقات کروائی جانی چاہئے۔ انہوں نے مودی کے خلاف کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی کے الزامات کا راست حوالہ دیئے بغیر کہا کہ مودی جب گجرات کے چیف منسٹر تھے، اسی وقت انہوں نے سہارا اور برلا گروپ سے من مانی دولت حاصل کی تھی۔ یہ الزامات نہایت ہی سنگین ہیں اور ان کی غیر جانبدارانہ تحقیقات کی جانی چاہئے۔ بنارس ہندو یونیورسٹی میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے نریندر مودی نے اپوزیشن پر تنقید کی تھی اور کہا تھا کہ یہ پارٹیاں نوٹ بندی کے مسئلہ پر پارلیمنٹ کی کارروائی کو مبینہ طور پر درہم برہم کررہی ہیں اور کہا تھا کہ یہ پارٹیاں پاکستان جیسے کرپٹ ممالک کو بچانے کی کوشش کررہے ہیں جو دہشت گردوں کو امداد فراہم کرتا ہے۔ کل گجرات میں ایک جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے راہول گاندھی نے مودی پر شدید تنقید کی تھی۔

TOPPOPULARRECENT