Saturday , October 21 2017
Home / شہر کی خبریں / رمضان سے قبل منظورہ بلدی کام ہنوز نامکمل، حکام کی عدم دلچسپی

رمضان سے قبل منظورہ بلدی کام ہنوز نامکمل، حکام کی عدم دلچسپی

برقی و آبرسانی کے انتظامات ٹھپ، سڑکیں ناکارہ، پریشان حال عوام میں برہمی
حیدرآباد۔19جون(سیاست نیوز)  ماہ رمضان المبارک کے آغاز سے قبل جن کاموں کو مکمل کیا جانا چاہئے تھا ان کاموں کا آغاز اب ہو رہا ہے۔ جی ہاں بلدیہ نے رمضان کی آمد سے قبل جن کاموں کو منظوری فراہم کی تھی اور یہ کام ماہ رمضان المبارک کے پیش نظر منظور کئے گئے تھے ان کاموں کی عدم تکمیل پر بھی مقامی قائدین کی خاموشی سے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ ریاستی حکومت کی جانب سے کتنی بھی غلطیاں کی جائیں ان پر حکومت سے بازپرس کرنے والا کوئی نہیں ہے۔ دونوں شہروں حیدرآباد کے مختلف محلہ جات بالخصوص مساجد کے قریب مورم اندازی‘ صاف صفائی ‘ سڑک کی تعمیر جیسے معمولی کاموں کی تکمیل ابھی تک نہیں ہو پائی ہے۔ دونوں شہروں میں منتخبہ عوامی نمائندے عہدیداروں کو ان کاموں کی عاجلانہ تکمیل کویقینی بنانے پر توجہ دلوانے سے قاصر نظر آرہے ہیں جس کے سبب بلدیہ میں عہدیداروں کی من مانی کا سلسلہ جاری ہے۔ عام طور پرماہ رمضان المبارک کے دوران مساجد کے آس پاس برقی کھمبوں کی درستگی‘ ڈرینیج کے بہنے کی شکایات وغیرہ کو دور کرنے کیلئے اقدامات کئے جاتے ہیں لیکن اس برس ان کاموں کا آغاز بھی رمضان کے آغاز سے قبل نہیں ہو پایا بلکہ ماہ رمضان کا ایک عشرہ گذرجانے کے بعد ان کاموں کی حوالگی کیلئے ٹنڈر کشائی کا عمل مکمل کیا گیا جس سے اندازہ ہوتا ہے کہ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے کاموں کی رفتار کیسی ہے؟ ماہ مقدس کے تعمیری و ترقیاتی کاموں سے بھی مقامی قائدین کی عدم دلچسپی سے عوام میں شدید ناراضگی پائی جاتی ہے لیکن اس ناراضگی کو دور کرنے کے فن میں مہارت رکھنے والے قائدین دراصل ان ترقیاتی کاموں میں دلچسپی نہیں لے رہے ہیں‘ عوام کا کہنا ہے کہ جو لوگ عوام کی ناراضگی دور کرنے میںاپنی توانائی ضائع کرتے ہیں وہ اگر عوام کو سہولتوں کی فراہمی پر توجہ مرکوز کرتے ہوئے بروقت شکایات کے ازالہ پر توجہ دیں تو ممکن ہے کہ حالات تبدیل ہو جائیں۔ بلدیہ کی جانب سے منظورہ خصوصی کاموں کی تکمیل کو یقینی بنانے کیلئے ضروری ہے کہ بلدی عہدیداروں کو متحرک کیا جائے اور ان کو اپنے متعلقہ شعبہ میں تعمیراتی و ترقیاتی کاموں کی تکمیل پر توجہ مرکوز کرنے کی ہدایات جاری کریں۔ پرانے شہر کے علاوہ نئے شہر کے علاقوں سے روزانہ کچہرے کی نکاسی کو یقینی بنانے کا اعلان کیا گیا تھا لیکن اس اعلان پر بھی مؤثر عمل آوری کے کوئی آثار نظر نہیں آرہے ہیں بلکہ کئی مرکزی مقامات پر روزانہ کچہرے کی عدم نکاسی کے سبب بدبو و تعفن پھیل رہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT