Wednesday , September 20 2017
Home / Top Stories / رمضان میں کھانے پر لوگوں کو گرفتار کرنا ’یہ اسلام نہیں ہے‘۔ بختاور بھٹو

رمضان میں کھانے پر لوگوں کو گرفتار کرنا ’یہ اسلام نہیں ہے‘۔ بختاور بھٹو

نئی دہلی: بے نظیر بھٹو کی بیٹی ‘ بختاور بھٹو زرداری نے ایک روز قبل ٹوئٹ کے ذریعہ رمضان میں کھانے پرلوگوں کو دی جانے والی سزاء کے متعلق قوانین پر شدید تنقید کی اور اپنے ملک کی مذمت کی جہاں پر دہشت گردوں کو آزادی کے ساتھ گھومنے کا موقع فراہم کیاجارہا ہے۔

ٹی او ائی میں شائع خبر کے مطابق‘ بختاور نے احترامِ رمضان قانون جس کے تحت رمضان کے دوران ’’ کھلے عام‘‘ کھانے پرتین ماہ کی سزاء کا لزوم عمل میں لایاگیا ہے کو اپنی شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ضیاء الحق کے دور 1981میں بنائے گئے قانون کوزائد جرمانے کے اضافے کے ساتھ مزید سخت بنایاگیاہے۔


بختاور نے اس بات کی طرف اشارہ دیا کہ ملالہ یوسف زئی کو قتل کرنے کی کوشش پر کسی کی گرفتاری عمل میں نہیں آتی مگر رمضان میں پانی پینے پر گرفتار کرکے اسکو سلاخوں کے پیچھے ڈال دیاجاتا ہے۔ آرڈیننس کے مطابق جرمانے کی رقم 500سے بڑھاکر 25,000کردی گئی ہے۔

وہیں پر قانون کی خلاف ورزی کرنے والی ریسٹورنٹس پر 500,000یا اس سے زائد کا جرمانہ عائد کیاجاسکتا ہے‘ اس کے علاوہ بختاور نے سوا ل کیا کہ جو چھوٹے اور بیمار ہیں انہیں پانی پینے پر کس طرح گرفتار کیاجاسکتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT