Tuesday , October 17 2017
Home / شہر کی خبریں / رمضان پیاکیج پر 18 کروڑ روپیوں کا خرچ

رمضان پیاکیج پر 18 کروڑ روپیوں کا خرچ

پیاکیج پر عمل آوری کا جائزہ ، مساجد ، یتیم خانوں میں افطار و طعام و ملبوسات کی تقسیم
حیدرآباد۔/16جون، ( سیاست نیوز) ڈائرکٹر جنرل اینٹی کرپشن بیورو اے کے خاں نے اقلیتی بہبود اور وقف بورڈ کے اعلیٰ عہدیداروں کے ساتھ حکومت کے رمضان پیاکیج پر عمل آوری کا جائزہ لیا۔ حکومت نے اس پیاکیج پر عمل آوری کی ذمہ داری اے کے خاں کو سونپی ہے۔ گذشتہ سال کی طرح اس سال بھی رمضان پیاکیج پر تقریباً 13کروڑ روپئے کے خرچ کا تخمینہ کیا گیا ہے تاہم حکومت کی جانب سے ابھی تک بجٹ کی اجرائی عمل میں نہیں لائی گئی۔ رمضان پیاکیج کو قطعیت دینے کے بعد حکومت بجٹ جاری کرسکتی ہے۔ اس پیاکیج پر عمل آوری کیلئے گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے حدود میں 100مساجد اور اضلاع میں 95 مساجد کا انتخاب کیا جارہا ہے۔ گریٹر حیدرآباد کے 24اسمبلی حلقوں کے ارکان اسمبلی سے ان کے حلقہ میں 4 مساجد کے نام حاصل کئے جارہے ہیں۔ اس کے علاوہ 9 اضلاع میں ہر اسمبلی حلقہ کے ہیڈ کوارٹر پر ایک مسجد کا انتخاب کیا جائے گا۔ چیف منسٹر کی دعوت افطار کے دن ان مساجد میں دعوت افطار اور کھانے کا انتظام کیا جائے گا۔ اس مقصد کیلئے ہر مسجد کو 2 لاکھ روپئے جاری کئے جائیں گے اور مسجد انتظامیہ کو افطار کے علاوہ 1000 افراد کیلئے کھانے کا انتظام کرنا ہوگا۔ کھانے کے مینو کو بھی قطعیت دے دی گئی ہے جس میں مٹن بریانی، مرچ سالن، چٹنی، سلاد اور ڈبل کا میٹھا شامل ہوگا۔ شہر میں شیعہ فرقہ کے 6 اور مہدوی فرقہ کی 2 مساجد میں بھی اس پیاکیج پر عمل کیا جائے گا۔ شہر کے 4 یتیم خانوں میں بھی افطار، کھانے کا انتظام اور کپڑوں کی تقسیم عمل میں آئے گی۔ اے کے خاں نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ اسکیم پر مکمل شفافیت سے عمل کیا جائے۔ 2لاکھ خاندانوں کو رمضان کے تحفہ کے طور پر کپڑے تقسیم کئے جائیں گے۔ 17 تا 19جون کے درمیان شہر کی 100مساجد کو کپڑوں کے پیاکٹس پہنچائے جائیں گے جبکہ 19تا 23جون اضلاع میں سربراہی عمل میں آئے گی۔ حج ہاوز میں جہاں کپڑوں کے پیاکٹس رکھے جائیں گے نگرانی کیلئے پولیس پکیٹ تعینات کیا گیا ہے۔ کپڑوں میں مَرد افراد کیلئے 5.5میٹر کا ایک کرتا پاجامہ کا کپڑا شامل رہے گا جبکہ خواتین کیلئے 6میٹر کی ایک ساڑی معہ بلوز اور ایک شلوار قمیض شامل رہے گا۔ سربراہ کرنے والی کمپنی کو پابند کیا گیا ہے کہ وہ طئے شدہ معیار کو برقرار رکھیں۔ معیار کی جانچ کیلئے کمیٹی تشکیل دی گئی تھی۔ کمپنی نے کپڑوں کا  یہ پیاکٹ فی کس 395/- روپئے میں سربراہ کرنے سے اتفاق کیا۔ گریٹر حیدرآباد حدود کے24اسمبلی حلقہ جات میں ایک لاکھ پیاکٹس کی تقسیم عمل میں آئے گی اور ہر منتخبہ مسجد میں 1000 پیاکٹس تقسیم کئے جائیں گے۔6شیعہ اور 2مساجد میں 80ہزار پیاکیٹس کی تقسیم عمل میں آئے گی۔ عہدیداروں نے اخراجات کا تخمینہ کرتے ہوئے حکومت کو رپورٹ پیش کئے ہیں جس کے تحت دعوت افطار اور طعام پر 4کروڑ16 لاکھ روپئے کا خرچ آئے گا جبکہ کپڑوں کے تحفہ کی تقسیم پر8 کروڑ 21 لاکھ 60 ہزار روپئے خرچ ہوں گے۔

TOPPOPULARRECENT