Friday , August 18 2017
Home / شہر کی خبریں / رمضان کے دوران تمام مساجد میں بلاوقفہ برقی سربراہی کی ہدایت

رمضان کے دوران تمام مساجد میں بلاوقفہ برقی سربراہی کی ہدایت

سکریٹریٹ میں ڈپٹی چیف منسٹر محمود علی کا جائزہ اجلاس، عہدیداروں کو مؤثر انتظامات کی ہدایت، دعوت افطار کیلئے 15 کروڑ روپئے مختص
حیدرآباد۔/7جون، ( سیاست نیوز) تلنگانہ حکومت نے کہا ہے کہ گذشتہ شب شہر حیدرآباد کے کئی علاقوں بشمول پرانا شہر حیدرآباد میں تیز ہواؤں اور بارش کی وجہ سے برقی منقطع ہوئی تھی تاہم اس طرح کی صوررتحال کا آئندہ اعاد ہ نہ ہونے کیلئے ہنگامی نوعیت کے اقدامات کرنے کے ساتھ اہم مقامات بشمول مکہ مسجد، شاہی مسجد پر جنریٹرس بھی تیار رکھنے کی برقی عہدیداروں کو ہدایت دی گئی ہے۔ اور کہا کہ کسی اور وجوہات سے برقی سربراہی منقطع نہیں ہوگی۔ شہر حیدرآباد میں بالخصوص ماہ رمضان المبارک کے آغاز کے دن ہی اچانک شہر حیدرآباد کے بیشتر علاقوں بشمول پرانے شہر کے علاقوں میں نماز تراویح کے وقت ہی برقی سربراہی کے منقطع ہوجانے کی وجہ پیدا شدہ حالات کا جائزہ لینے کے لئے ڈپٹی چیف منسٹر مسٹر محمد محمود علی کی صدارت میں آج سہ پہر سکریٹریٹ میں واقع ان ( ڈپٹی چیف منسٹر ) کے چیمبر کے قریب کانفرنس ہال میں ہنگامی اجلاس طلب کیا گیا۔ اس اجلاس میں ٹی سرینواس یادو وزیر انیمل ہسبنڈری کے علاوہ سید عمر جلیل سکریٹری ریاستی محکمہ اقلیتی بہبود کے علاوہ محکمہ برقی و گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے کئی اعلیٰ عہدیدار شریک تھے اور گذشتہ شب برقی سربراہی کے منقطع ہوجانے کے مسئلہ کا تفصیلی جائزہ لیا گیا اور متعلقہ عہدیداروں کو بہر صورت ماہ رمضان کے پیش نظر برقی کی موثر سربراہی کو یقینی بنانے اور شہر کے تمام مقامات پر زائد تعداد میں برقی ٹرانسفارمرس احتیاطی طور پر رکھے جائیں۔ علاوہ ازیں شہر میں صحت و صفائی کے بھی موثر انتظامات کو یقینی بنانے کی متعلقہ بلدی عہدیداروں کو ضروری ہدایات دی گئی۔ اجلاس کے اختتام پر اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ڈپٹی چیف منسٹر جناب محمد محمود علی نے کہاکہ ریاست تلنگانہ کی تشکیل کے بعد تلنگانہ میں برقی سربراہی کسی خلل اندازی کے بغیر سربراہ کی جارہی ہے اور بالخصوص شہر حیدرآباد میں بھی برقی کی موثر سربراہی عمل میں لائی جارہی ہے۔ لیکن اتفاقی طور پر گذشتہ شب اچانک تیز بارش اور ہواؤں کی وجہ سے برقی سربراہی اچانک منقطع ہوگئی جبکہ ماہ رمضان کے آغاز پر تمام مساجد میں نماز تراویح جاری تھی جس کی وجہ سے عوام بالخصوص نمازیوں کو بھی کافی مشکلات پیش آئیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت تلنگانہ نے ماہ رمضان کے پیش نظر قبل از وقت ہی احتیاطی اقدامات کرکے زاید برقی ٹرانسفارمرس رکھے گئے ہیں تاکہ کسی اتفاقی واقعہ کی وجہ سے برقی منقطع ہونے پر فوری نئے ٹرانسفارمر کے ذریعہ برقی کی سربراہی کو بحال کیا جاسکے۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے واضح طور پر کہا کہ آئندہ اس طرح کی صورتحال پیدا ہونے کا اعادہ  نہیں ہونے دیا جائے گا اور ساتھ ہی ساتھ برقی کے اعلیٰ عہدیداروں کو بھی صورتحال کا جائزہ لینے اور ہمیشہ عوام کیلئے دستیاب رہنے کی بھی سخت ہدایات دی گئی ہیں۔ علاوہ ازیں بارش کی وجہ سے پیدا ہونے والی گندگی وغیرہ کی صاف صفائی کیلئے بھی ضروری اقدامات کرنے کی بلدی عہدیداروں کو ہدایات دی گئیں۔ مسٹر سرینواس یادو نے بتایاکہ برقی اور بلدی عہدیداروں کو ماہ رمضان المبارک کے پیش نظر 24گھنٹے اپنے اپنے دفاتر میں موجود رہنے کے علاوہ تمام مساجد کمیٹیوں کو اپنے فون نمبرات دینے کی بھی بلدی و برقی عہدیداروں کو ہدایات دی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ حکومت میں عید و تہواروں بشمول ماہ رمضان کے موقع پر جو انتظامات کئے جارہے ہیں اس کی سابق میں کوئی نظیر نہیں ملے گی۔ حکومت نے افطار پروگرام کیلئے اس مرتبہ 15کروڑ روپئے فراہم کررہی ہے اور تمام مساجد کو جہاں کہیں بھی پانی کی ضرورت ہو پانی سربراہ کرنے کی بھی متعلقہ عہدیداروں کو ہدایات دی گئی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT