Tuesday , October 17 2017
Home / دنیا / روس، شام میں فوجی اڈہ قائم کرنے کا خواہا ں: امریکہ

روس، شام میں فوجی اڈہ قائم کرنے کا خواہا ں: امریکہ

واشنگٹن ۔ 15 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ نے کہا ہے کہ حال ہی میں شام کے شہر لاذقیہ کے قریب روسی نقل و حرکت سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ وہ وہاں ’فارورڈ ایئر آپریٹنگ بیس‘ قائم کرنے کا ارادہ رکھتا ہے۔ یہ بات پیر کو پینٹاگون کے ترجمان جیف ڈیوس نے کہی۔ انھوں نے بتایا کہ ساحلی علاقوں سے لوگوں اور سازوسامان کی منتقلی کا عمل جاری ہے۔ امریکہ اور ناٹو کی تشویش تاہم دوسری جانب روس نے کہا ہے کہ شامی حکومت کو فوجی ہتھیاروں کی منتقلی شدت پسند تنظیم دولتِ اسلامیہ سے لڑنے کے لیے کی جا رہی ہے۔ خیال رہے کہ 2011 سے شام میں شروع ہونے والی خانہ جنگی میں صدر بشار الاسد کے لیے ماسکو اہم اتحادی رہا ہے۔  پینٹاگون کے ترجمان نے کہا کہ امریکہ کو خدشہ ہے کہ شام میں روسی فوج کی نقل و حرکت سے امریکہ اور اتحادی افواج کی جانب سے شام میں دولتِ اسلامیہ کے خلاف فضائی حملوں کے درمیان تصادم کی صورتحال پیدا کر سکتا ہے۔ امریکی حکام کو یہ خدشہ بھی لاحق ہے کہ روسی حمایت صدر بشار الاسد کی حکومت کو ایک ایسے وقت میں مستحکم کرے گی جب وہ میدانِ جنگ میں ہار رہی ہے۔ جس کی وجہ سے اس جنگ کا سیاسی حل نکالنے کے لیے کی جانے والی حالیہ کوششیں بھی پیچیدگی کا شکار ہو جائیں گی۔ خیال رہے کہ امریکہ کی جانب سے یہ بیان ایک ایسے وقت میں آیا ہے جب دو روز قبل ہی 80 ٹن امداد لے کر دو روسی کارگو جہاز شام پہنچے ہیں۔ روسی وزارتِ خارجہ نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ یہ جہاز مہاجرین کیلئے خیمے لے کر شام پہنچے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT