Saturday , August 19 2017
Home / کھیل کی خبریں / روٹ مظاہروں اور ٹیم پرسابق کھلاڑیوںکی تنقید سے مایوس

روٹ مظاہروں اور ٹیم پرسابق کھلاڑیوںکی تنقید سے مایوس

ناٹنگھم۔18جولائی (سیاست ڈاٹ کام) جنوبی افریقہ کے خلاف شکست کے بعد مایوس انگلینڈ کرکٹ ٹیم کو اپنے سابق کرکٹروں مائیکل وان، ناصر حسین جیسے عظیم کھلاڑیوں کی سخت تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جبکہ موجودہ کپتان جیو روٹ نے اسے غیر مناسب قرار دیا ہے ۔سابق کپتان وان نے جنوبی افریقہ ٹیم کے خلاف انگلش بیٹسمینوں کی کارکردگی پر سخت مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میچ میں بیٹسمینوںکی کارکردگی کافی ناقص تھی جس کی وجہ سے انگلینڈ کو340 رنز کی شرمناک شکست ہوئی ہے ۔ وان نے ساتھ ہی کہا کہ انگلینڈ کے کھلاڑیوں کو دیکھ کر ایسا لگ رہا تھا کہ وہ ٹوئنٹی 20 کھیل رہے ہیں۔ ٹسٹ کی دوسری اننگز میں ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے انگلینڈ کی ٹیم 133 رنز پر سمٹ گئی تھی اور میچ میں اسے جنوبی افریقہ سے رنز کے لحاظ سے دوسری سب سے بڑی شکست کا ساما کرنا پڑا ۔ یہ انگلینڈ ٹیم کی حالیہ10 میچوں میں ساتویں ٹسٹ شکست ہے ۔ وان نے کہا کہ انگلینڈ ٹیم ٹسٹ کے مطابق خود کو ہم آہنگ نہیں کر پا رہی ہے ۔وان کے علاوہ دیگر سابق انگلینڈ کے کپتان ناصر حسین نے بھی کافی تنقید کی ہے ۔ جیف بائیکاٹ نے بھی انگلش کھلاڑیوں کی کارکردگی کو بے حد خراب قرار دیا ۔اگرچہ موجودہ انگلش کپتان روٹ نے وان کی تنقید پر مایوسی ظاہر کی ہے اور کہا کہ وہ اس بات پر یقین نہیں کر سکتے کہ سابق کرکٹر اس طرح کی بات کر سکتے ہیں۔ ہم اس طرح کی سیریز جیتنے میں فخر محسوس کرتے ہیں لیکن اس ہفتے ہم نے خراب کھیلا۔ روٹ نے اگرچہ تسلیم کیا ہے کہ میچ میں بیٹسمینوں کی کارکردگی کافی مایوس کن تھی اور ٹیم کی اپنی صلاحیت کے مطابق نہیں کھیل سکی۔انہوں نے ساتھ ہی کہا کہ وہ اس بات کو تسلیم کرتے ہیں کہ اگر انگلینڈ کو اس طرح کے میچ جیتنے ہیں تو انہیں ونڈے کرکٹ سے ٹسٹ میں خود کو جلد ہم آہنگ کرنا ہوگا۔ہم نے جس طرح کی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے وہ کافی مایوس کن تھی۔ہم ایسی ٹیم ہیں جو کبھی بھی آسانی سے ہار نہیں مانتے ہیں لیکن بدقسمتی سے ہم اس میچ میں بطور ٹیم اچھا نہیں کھیل سکے ۔

TOPPOPULARRECENT