Friday , September 22 2017
Home / شہر کی خبریں / روہت پر روپن والا کمیشن رپورٹ کی مذمت، چاڈا وینکٹ ریڈی

روہت پر روپن والا کمیشن رپورٹ کی مذمت، چاڈا وینکٹ ریڈی

حیدرآباد ۔ 8 اکٹوبر (این ایس ایس) سی پی آئی تلنگانہ نے روہت ویمولا کیس پر جسٹس روپن والا کمیشن کی رپورٹ جس میں روہت ویمولا کو دلت نہیں بتایا گیا ہے، کی شدید مذمت کی ہے۔ سی پی آئی تلنگانہ ریاستی کونسل کے سکریٹری چاڈا وینکٹ ریڈی نے رپورٹ کو ناانصافی پر مبنی قرار دیا۔ انہوں نے کمیشن کی رپورٹ کو شدید مذمت کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ کمیشن غلط رپورٹس کے ساتھ حقائق کو نہیں چھپاتے۔ ایک نوٹ میں چاڈا وینکٹ ریڈی نے کہا کہ روہت کے آبائی ضلع کے کلکٹر قومی درج فہرست ذات کمیشن نے اس بات کو واضح کردیا ہیکہ روہت کا درج فہرست ذات سے تعلق تھا۔ اس سے ظاہر ہوتا ہے روپن والا کمیشن نے دانستہ طور پر ایسی رپورٹ تیار کی جس سے قصوروار مرکزی وزراء سمرتی ایرانی، بی دتاتریہ، حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی کے وائس چانسلر اپاراؤ کو کیس سے بچایا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت اس کیس کو صرف نظر کررہی ہے۔
جبکہ ایسے واضح ثبوت موجود ہیں کہ روہت دلت طبقہ سے تعلق رکھتے تھے جوکہ ان کی خودکشی کے وجوہات بنے۔ انہوں نے بی جے پی حکومت اور وائس چانسلر کو روہت کی خودکشی کا ذمہ دار بتاتے ہوئے طلبہ سے کہا کہ وہ یونیورسٹی طلبہ کے خلاف امتیازی سلوک پر جنگ کا آغاز کریں۔

TOPPOPULARRECENT