Thursday , August 24 2017
Home / شہر کی خبریں / رچہ کونڈہ کمشنریٹ حدود میں 3000 سی سی کیمروں کی تنصیب

رچہ کونڈہ کمشنریٹ حدود میں 3000 سی سی کیمروں کی تنصیب

کمشنریٹ کی عمارت تعمیر کرنے اراضی کی نشاندہی کا عمل جاری : مہیش بھگوت کی پریس کانفرنس
حیدرآباد 24 ڈسمبر ( پی ٹی آئی ) رچہ کونڈہ پولیس کمشنریٹ کے حدود میں برقی نگرانی میں اضافہ کرنے اور جرائم کی روک تھام اور ان کا پتہ چلانے کے مقصد سے زائد از 3000 سی سی ٹی وی کیمرے نصب کئے جائیں گے ۔ رچہ کونڈہ کے کمشنر پولیس مہیش مرلی دھر بھگوت نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ سی سی ٹی وی پراجیکٹ کو کمشنریٹ کے علاقہ میں کمیونٹی عوام کے تعاون سے شروع کیا گیا ہے ۔ یہاں 1,219 بستیوں میں یہ پراجیکٹ نافذ کیا گیا ہے اور اب تک کمشنریٹ کے حدود میں 854 کیمرے نصب کردئے گئے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ مزید کیمروں کی تنصیب کیلئے بھی کام جاری ہے ۔ مسٹر بھگوت نے کہا کہ اسی طرح سرکاری سی سی ٹی وی پراجیکٹ بھی پیشرفت کر رہا ہے اور تین مراحل میں کام کرتے ہوئے مختلف اہم ترین مقامات پر مزید 2,234 سی سی ٹی وی کیمرے نصب کئے جائیں گے ۔ رچہ کونڈہ کمشنریٹ کو جاریہ سال جون میں سائبر آباد کمشنریٹ کے حدود سے علیحدہ کیا گیا ہے اور اس کی نئی عمارت آئندہ ایک سال مے تعمیر ہوجائیگی ۔ مسٹر بھاگوت نے مزید کہا کہ نئے کمشنریٹ کی عمارت کی تعمیر کیلئے اراضی کی شناخت کا کام قطعی مراحل میں ہے ۔ کمشنر پولیس نے بتایا کہ رچہ کونڈہ کمشنریٹ کی ویب سائیٹ کا یکم جنوری 2017 کو آغاز ہوجائیگا ۔ کمشنر رچہ کونڈہ نے بتایا کہ گذشتہ سال یہاں مختلف نوعیت کے 12,750 جرائم کے واقعات پیش آئے ان میں ڈکیتی ‘ رہزنی ‘ اغوا اورعصمت ریزی کے واقعات بھی شامل تھے ۔ ان تمام میں جملہ 8,411 واقعات کی یکسوئی کرلی گئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اغوا کے گذشتہ سال میں 154 واقعات پیش آئے تھے جن میں 120 کیسیس کو حل کرلیا گیا ہے جبکہ عصمت ریزی کے 153 واقعات میں 142 واقعات کو حل کرلیا گیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ جاریہ سال 20 ڈسمبر تک پراپرٹی کیسیس کی تعداد 2,503 درج کی گئی جبکہ یہ تعداد گذشتہ سال میں 2558 تھی ۔ مسٹر بھگوت نے مزید کہا کہ 57 مقدمات ان افراد کے خلاف درج کئے گئے جو قحبہ گری کے اڈے چلا رہے تھے ۔ ان واقعات میں 166 آرگنائزرس کو گرفتار کیا گیا اور 71 متاثرہ لڑکیوں اور خواتین کو بچالیا گیا ۔         ( متعلقہ خبر اندرونی صفحات )

TOPPOPULARRECENT