Monday , September 25 2017
Home / مضامین / رہائش گاہوں کی تزئین کاری سویڈن کے ادارہ IKEA کا حیدرآباد میں ریٹیل اسٹور

رہائش گاہوں کی تزئین کاری سویڈن کے ادارہ IKEA کا حیدرآباد میں ریٹیل اسٹور

محمد شہاب الدین ہاشمی
اس حقیقت سے کوئی انکار نہیں کرسکتا کہ سویڈن اور ڈنمارک یوروپ کے دو ایسے تیزی کے ساتھ بین الاقوامی سطح پر معاشی اور صنعتی طور پر ترقی یافتہ ممالک میں شامل ہیں، جنہوں نے انتہائی قلیل عرصہ میں فقیدالمثال کامیابیوں کے ذریعہ یہ مقام حاصل کیاہے۔ جبکہ دنیا بھر میں قطب شمالی کے آخر سے حصہ سے جڑے ہوئے ان ممالک میں صنعتی ترقی کے ساتھ ساتھ قدرتی وسائل ( گھنے جنگلات ) کے بھی بے شمار آثار ابتدائی زمانہ ہی سے موجود ہیں۔ سمندروں سے گھرے ہوئے یہ خوبصورت ممالک جہاں ہر طرح کی آلودگی سے پاک و صاف ہیں وہیں یہاں کے رہنے بسنے والے بھی انتہائی پابند ڈسپلن شہری کہلانے میں دنیا کے کسی بھی ملک کے عوام سے پیچھے نہیں ہیں۔ علاوہ ازیں سویڈن اور ڈنمارک میں عوامی نظم و نسق دنیا کے کسی بھی جمہوری ملک سے کم نہیں ہے۔ یہاں کی خصوصیت یہ ہے کہ عوام خود اس قدر نظم و قانون کے پابند ہیں کہ انہیں قوانین کی عمل آوری کیلئے تیسری آنکھ یعنی پولیس وغیرہ کی بھی خاص ضرورت درپیش نظر نہیں آتی، کیونکہ یہاں کے رہنے بسنے والے اس قدر تربیت یافتہ ہیں کہ وہ اپنے خاندان کے ساتھ ساتھ ایک صحت مند معاشرہ کی تشکیل کی ازخود ذمہ داری نبھاتے ہوئے نظر آتے ہیں۔
صنعتی اعتبار سے بین الاقوامی سطح پر ’’ ہوم فرنیشنگ ‘‘(Home Furnishing) اشیاء کی تیاری کے شعبہ میں زبردست شہرت رکھنے والی سویڈن کے جنوبی علاقہ ’’ المہلٹ ‘‘ (ALMHULT) میں قائم نامور کمپنی’ ائیکیا ‘ (IKEA) نے اب ہندوستان میں بھی دوسرے معنوں میں رہائش گاہوں کی تزئین کاری کیلئے درکار بین الاقوامی معیار کی تمام گھریلو اشیاء کو ہندوستان جیسے تیزی سے ترقی یافتہ ملک کے چپہ چپہ میں پھیلانے کا بیڑہ اٹھایا ہے۔ اس خصوص میں سویڈن ( المہلٹ ) کے ایک نامور صنعتی ادارہ نے حیدرآباد فرخندہ بنیاد کو ہندوستان کے لئے شہر کے طور پر نہ صرف منتخب کیا ہے بلکہ اپنی تجارتی سرگرمیوں کو فروغ دینے کا فیصلہ بھی کرلیا ہے۔ توقع ہے کہ اگلے سال یعنی 2017 کے ماہ اگسٹ یا ستمبر سے اس صنعتی ادارہ کی سرگرمیاں ہندوستان میں بھی شروع ہوجائیں گی بالخصوص ’’ ایکیا۔ IKEA‘‘ کمپنی نے ملک میں اپنے پہلے ریٹیل اسٹور کا شہر حیدرآباد میں قیام عمل میں لانے کے اقدامات کرچکے ہیں اور ان اقدامات کی روشنی میں جاریہ سال میں ماہ جولائی یا اگسٹ کے دوران اس کمپنی نے اپنے پہلے ریٹیل اسٹور کی عمارت کیلئے تعمیری کاموں کا آغاز کرنے تقریب سنگ  بنیاد رکھنے کی تیاریوں میں تیزی پیدا کردی ہے۔ ایکیا۔ IKEA کمپنی جس نے دنیا کے 45 اہم ممالک میں فی الحال 385 ریٹیل اسٹورس چلاتے ہوئے ان ممالک کے عوام کو انتہائی واجبی داموں( قیمتوں ) پر رہائش گاہوں کی تزئین کاری کیلئے درکار تمام گھریلو اشیاء فراہم کررہی ہے۔ جب اپنے کاروبار کو توسیع دینے اور ترقیاتی منصوبہ جات کے تحت ہندوستان جیسے ترقی یافتہ ملک میں اپنے قدم جمارہی ہے۔ ایکیا IKEA کمپنی انتظامیہ نے اپنے اقدامات کے ایک حصہ کے طور پر حیدرآباد سے تعلق رکھنے والے منتخبہ صحیفہ نگاروں پر مشتمل ایک ٹیم کو سویڈن کے جنوبی علاقہ میں واقع المہلٹ ALMHULT کے اپنے اہم ترین مرکز کا دورہ کروایا۔ اس موقع پر ایکیا کمپنی کے مختلف شعبہ جات سے تعلق رکھنے والے اعلیٰ عہدیداروں نے دورہ کرنے والے صحیفہ نگاروں کو کمپنی کی کارکردگی سے واقف کرواتے ہوئے بتایا کہ ایکیا کمپنی نے بزنس کو صرف سرمایہ کاری کے ذریعہ نفع حاصل کرنا کبھی تصور نہیں کیا بلکہ نفع کے حصول کو اہمیت دیتے ہوئے معیاری اشیاء کے تجارتی کاروبار انجام دینے سے دلچسپی کا اظہار کیا ہے۔ ہوم فرنیشنگ اشیاء کے شعبہ میں عالمی شہرت رکھنے والی ایکیا کمپنی اپنا ہر اسٹور کئی ایکڑ اراضی کے وسیع و عریض رقبہ پر تعمیر کرکے قائم کرتی ہے اور یہ کمنپی اپنے اسٹورس کے ذریعہ تقریباً 10ہزار اقسام کے گھریلو اشیاء فروخت کرتی ہے۔ اسی دوران ہندوستان میں ایکیا IKEA کمپنی کی سرکاری سطح پر ترجمانی کرنے والے سینئر عہدیدار مسٹر پیٹرک انتونی نے صحیفہ نگاروں کے ساتھ تبادلہ خیال کرتے ہوئے بتایا کہ حیدرآباد میں گچی باؤلی کے پاس آئندہ سال قائم کئے جانے والے ایک ریٹیل اسٹور پر 600 کروڑ روپئے کی سرمایہ کاری کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ درحقیقت ایکیا کمپنی نے ہندوستان میں سال 2013 سے ہی ریٹیل کاروباری شعبہ میں داخل ہونے کیلئے اپنی کوششوں کا آغاز کیا اور اپنا پہلا ریٹیل اسٹور حیدرآباد میں قائم کرنے کا فیصلہ کیا۔ بلکہ سال 2025تک ملک بھر میں 25 نئے ریٹیل اسٹورس قائم کرنے کا منصوبہ رکھتی ہے۔ حیدرآباد میں اپنے پہلے ریٹیل اسٹور کا آغاز کرنے کے فوری بعد دہلی، ممبئی، بنگلور جیسے اہم مقامات پر ایکیا کمپنی اپنے اسٹورس شروع کرے گی۔ مسٹر انتونی نے بتایا کہ حیدرآباد اسٹور کیلئے درکار عملہ کا انتخاب کرکے انہیں ایکیا کمپنی کے تہذیبی و اخلاقی اقدار پر مبنی تربیت دے گی۔ ملازمتوں کے معاملہ میں کمپنی 50 فیصد خواتین اور 50فیصد مرد افراد کو ملازمتیں فراہم کرے گی۔ حیدرآباد میں قائم کئے جانے والے ملک کے سب سے پہلے اسٹور سے متعلق تفصیلات سے واقف کرواتے ہوئے مسٹر پیٹرک انتونی نے بتایا کہ حیدرآباد کا اسٹور گچی باؤلی علاقہ میں قائم کئے جانے کا قوی امکان ہے اور یہ اسٹور چار لاکھ مربع فیٹ رقبہ پر محیط ہوگا۔ اس اسٹور کے احاطہ میں زاید از 1300 موٹر کاروں کو وقت واحد میں پارک کرنے کی سہولت فراہم کی جائے گی۔ اسی دوران IKEA کمپنی سے وابستہ دہلی سے تعلق رکھنے والی بزنس لیڈر شریمتی ویشالی مشرا نے بتایا کہ حیدرآباد میں اسٹور کا آغاز ہونے کے فوری بعد تلنگانہ میں تیار کی جانے والی عالمی شہرت کے حامل اشیاء کیلئے بھی کمپنی اپنے بزنس پارٹنرس کا انتخاب کرے گی بالخصوص دیہی خواتین کی تیار کردہ اشیاء کی خرید و فروخت کو اولین ترجیح دی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ ایکیا کمپنی نے ہندوستان میں اپنے کاروبار کے تعلق سے گہرائی کے ساتھ تحقیق کی ہے تاکہ ہندوستان میں کارآمد اسٹورس کھولے جاسکیں۔ علاوہ ازیں کمپنی نے کاروبار سے متعلق اپنے نمائندوں کے ذریعہ زاید از 500مکانات کا سروے کروایا ہے اور اس سروے کے دوران گھریلو زندگی، تہذیب و ثقافت اور اقدار کے بارے میں دوسری طرح کی تحقیق بھی کی گئی۔ انہوں نے بتایا ک کمپنی اشیاء کے استعمال کی اہمیت، معیار، واجبی قیمتوں کے علاوہ پائیداری پر اپنی اولین ترجیح دے گی۔ مسٹر انتونی نے بتایا کہ واجبی قیمتوں اور سستے داموں میں فرق پایا جاتا ہے۔ اشیاء کے معیار کی برقراری میں کمپنی کوئی سمجھوتہ نہ کرتے ہوئے حاصل ہونے والے نفع میں کمی کرکے عوام کو کم داموں پر اپنی اشیاء کی فراہمی ایکیا کمپنی کی ہمیشہ تجارتی حکمت عملی رہی ہے۔ ایکیا کمپنی کی خصوصیت یہ رہتی ہے کہ جہاں کہیں بھی اسٹورس قائم کرنے کیلئے اپنے قدم رکھتی ہے ان مقامات کی مارکٹوں کا تفصیلی تجزیہ کرتے ہوئے عوامی ضروریات اور مارکٹ میں دستیاب اشیاء کے مابین پائے جانے والے فرق کا اندازہ لگا کر نئی اشیاء کی تیاری اور نئے ڈیزائنس کو متعارف کرنا ایکیا کمپنی کا اہم مقصد ہوتا ہے۔ IKEA کمپنی کے تعلق سے مسٹر انتونی نے بتایا کہ اس کمپنی کی بنیاد ایک کم عمر 17سالہ نوجوان صنعت کار مسٹر انگوار کمپراڈ نے سال1943 کے دوران جنوبی سویڈن کے مقام المہلٹ (ALMHULT) میں رکھی تھی اور پھر سال 1958 میں ہی ایکیا کمپنی کا پہلا اسٹور بھی یہیں المہلٹ میں ہی قائم کیا گیا۔ اس کے علاوہ شمالی یوروپ میں ہی سب سے بڑی فرنیچر نمائش کا6700 مربع میٹر رقبہ پر ایکیا کمپنی کی جانب سے اہتمام کیا گیا تھا اور اس نمائش کے بعد ہی ایکیا کمپنی دنیا بھر میں وسعت پاتی رہی۔

TOPPOPULARRECENT