Wednesday , September 20 2017
Home / جرائم و حادثات / رہزنی اور سرقہ کی وارداتیں ، پولیس کے لیے چیلنج

رہزنی اور سرقہ کی وارداتیں ، پولیس کے لیے چیلنج

جھوٹی اطلاعات سے پولیس کو پریشانی و ناکامی
حیدرآباد ۔ 13 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : رہزنی و سرقہ کی وارداتیں ایک ایسا مسئلہ بن گیا ہے ۔ جو پولیس کے لیے چیلنج بن گیا ہے ۔ سخت ترین اقدامات اور انتھک کوششوں کے باوجود شہر میں سرقہ کی وارداتیں پیش آرہی ہیں جو ایک لاعلاج مرض بنتا جارہا ہے ۔ تاہم سارقوں اور رہزنوں کی سرگرمیوں سے پریشان سٹی پولیس کو اپنی ناکامی اور شرابیوں سے بھی پریشانی کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔ رہزنی اور سرقہ کی وارداتیں پولیس کو پریشان کرنے کا ذریعہ بن گئی ہیں ۔ ایک ایسا ہی واقعہ شہر کے پاش علاقہ بنجارہ ہلز میںپیش آیا جہاں ایک شخص جو شراب کے نشہ میں دھت تھا اس نے پولیس کو رہزنی کی جھوٹی اطلاع فراہم کردی ۔ اس اطلاع پر دوڑ دھوپ میں جٹی پولیس نے شرابی کے مکمل بیان کے بعد اندازہ لگالیا کہ اس نے رہزنی کی جھوٹی اطلاع دی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق اس شخص نے پولیس بنجارہ ہلز کے بجائے راست 100 پر رہزنی کی اطلاع دی ۔ ذرائع کے مطابق بنجارہ ہلز روڈ نمبر 12 ، ایم ایل اے کالونی کے ایک مکان میں ڈرائیور کا کام کرنے والا بی سنتوش ریڈی جو علاقہ کرشنا نگر کا ساکن تھا ۔ کل رات دیر گئے مالکین کو ایرپورٹ پر چھوڑنے کے بعد اپنے یوم پیدائش کے موقع پر پارٹی کا اہتمام کیا اور اپنے ساتھیوں منیش اور رفیق کو طلب کیا آدھی رات کو انہوں نے کثرت سے شراب نوشی کی اور پایہ نوش کرنے کی خواہش کرتے ہوئے پرانے شہر کا رخ کیا جہاں تینوں جو نشہ کی حالت میں دھت تھے آپس میں جھگڑ پڑے اس دوران سنتوش ریڈی کی طلائی چین جو دو تولے کی تھی گم ہوگئی ۔ صبح جب اس نے دیکھا کہ اس کے گلے میں جو چین تھی وہ نہیں مل رہی ہے پریشان ہو کر اس نے 100کو فون کیا اور رہزنی کی جھوٹی اطلاع فراہم کی ۔ جب بنجارہ ہلز پولیس نے خود شکایت گذار سے دریافت کیا تو اس نے شبہ ظاہر کیا کہ اس کے ساتھیوں نے چین کا سرقہ کرلیا ہوگا۔ پولیس رفیق اور منیش کی تلاش میں مصروف ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT