Thursday , August 24 2017
Home / Top Stories / ریاستوں کی ترقی کیلئے بی جے پی ٹیم تشکیل دینے کی ضرورت

ریاستوں کی ترقی کیلئے بی جے پی ٹیم تشکیل دینے کی ضرورت

New Delhi: Prime Minister Narendra Modi and BJP President Amit Shah at party's National Executive meet, in New Delhi on Saturday. PTI Photo by Kamal Kishore (PTI3_19_2016_000182A)

وزیراعظم مودی کا پارٹی ورکرس سے خطاب، امیت شاہ کو ایجنڈہ کی تکمیل کی ہدایت
نئی دہلی ، 25 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے ترقیاتی مسائل پر توجہ دینے پارٹی ورکرس پر زور دیئے جانے کے بعد بی جے پی صدر امیت شاہ نے ایک ٹیم تشکیل دینے کا فیصلہ کیا ہے جو تمام ریاستوں کا دورہ کرتے ہوئے ترقیاتی کاموں کو روبہ عمل لانے کا جائزہ لے گی۔ یہ ٹیم مرکزی حکومت کی پالیسیوں اور ایجنڈوں کی فی الفور عمل آوری کیلئے کام کرے گی۔ حکومت کی کوششوں کو کارگر بنانا بی جے پی ورکرس کی ذمہ داری ہے۔ اس ٹیم کے ارکان میں طاقتور قائدین کو شامل کیا جائے گا جس میں جنرل سکریٹری آرگنائزیشن کے علاوہ ان کے نائب بھی کام کریں گے جو آر ایس ایس کی صف سے نکل کر حکومت کی کارکردگی کو انجام دیں گے۔ یہ لوگ مختلف ریاستوں کا دورہ کرتے ہوئے مرکزی حکومت کی پالیسیوں اور ترقیاتی کاموں کو روبہ عمل لانے کا جائزہ لیں گے۔ اس ٹیم کے ارکان کم از کم 3 دن ریاستوں میں گذاریں گے اور ہر جگہ کاموں کا جائزہ لیا جائے گا۔ اس ٹیم کو تنظیمی فیصلوں کی عمل آوری کو یقینی بنانے کی ذمہ داری تفویض کی گئی ہے۔ ٹیم کی تشکیل کا فیصلہ پارٹی کے 19 اور 20 مارچ کو منعقدہ قومی عاملہ اجلاس میں کیا گیا تھا۔ دارالحکومت دہلی میں منعقدہ اجلاس میں وزیراعظم نریندر مودی نے کافی وقت گذارا تھا

 

اور اپنی تقریر کے ذریعہ پارٹی ورکرس میں ترقیات کیلئے جذبہ پیدا کیا تھا۔ وزیراعظم نے کہا تھا کہ پارٹی ورکرس کو حکومت کے ایجنڈہ پر عمل آوری کیلئے توجہ دینی چاہئے۔ اپوزیشن کی منفی مہم سے پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔ پارٹی سربراہ کو چاہئے کہ وہ حکومت کے تمام کاموں کے بہتر نتائج برآمد کرنے کی کوشش کریں۔ امیت شاہ سمجھا جاتا ہیکہ مرکزی قیادت کے ویژن اور پارٹی کی پالیسیوں کے درمیان کوئی فرق پیدا کرنا نہیں چاہتے۔ امیت شاہ کی جانب سے تشکیل کردہ یہ ٹیم تنظیمی کاموں کا جائزہ لے گی اور سرکاری کاموں کی اشاعت کو اولین ترجیح دے گی۔ اس کے ساتھ عوام سے بھی رابطہ قائم رکھے گی۔ یہ ٹیم 10 تا 12 ارکان پر مشتمل ہوگی اور ان میں سے ہر ایک مختلف ریاستوں کا دورہ کرے گی۔ اس کے بعد اپنی رپورٹ امیت شاہ کو پیش کرے گی۔ پارٹی کی جانب سے کئے گئے فیصلوں کے علاوہ مختلف گروپس بنا کر مورچہ نکالا جائے گا تاکہ عوام کے اندر حکومت کے ترقیاتی اقدام سے متعلق بیداری پیدا کی جائے۔ پارٹی نے یہ بھی فیصلہ کیا ہیکہ اندرون تین ماہ دوسرے نویں عاملہ اجلاس میں ان تمام کاموں کا جائزہ لیا جائے۔ پارٹی کے اعلیٰ قائدین کو بھی ہدایت جاری کی گئی ہیکہ وہ ڈسٹرکٹ اور منڈل سطح پر کام کریں اور تنظیمی فیصلوں کو بحسن و خوبی انجام دیں۔ تمام ریاستوں کا ایک کور گروپ بھی بنایا جائے گا جو ہر ماہ اس تعلق سے جائزہ منعقد کرے گا۔

TOPPOPULARRECENT