Tuesday , September 26 2017
Home / Top Stories / ریاستی بجٹ عوام کی توقعات کے مطابق ہوگا ‘ ہمہ جہتی ترقی پر توجہ

ریاستی بجٹ عوام کی توقعات کے مطابق ہوگا ‘ ہمہ جہتی ترقی پر توجہ

اسمبلی و کونسل کے مشترکہ اجلاس سے گورنر ای ایس ایل نرسمہن کا خطاب ۔ خطبہ میں مسلم تحفظات کا کوئی تذکرہ نہیں ۔ حکومت کی دیگر اسکیمات کا تفصیلی ذکر

حیدرآباد۔10 مارچ (سیاست نیوز) تلنگانہ حکومت کا سالانہ بجٹ برائے سال 2016-17ء عوامی توقعات و امیدوں کے مطابق ہوگا اور ریاست کی ترقی میں ایک اہم سنگ میل ثابت ہوگا ۔ گزشتہ 21 ماہ میں تلنگانہ حکومت نے عوام کی ترجیحی ضروریات کی نشاندہی کی ہے اور آبپاشی و برقی شعبوں پر توجہ دینے علاوہ مشن کاکتیہ، مشن بھگیرتا، بہبودی اسکیمات جیسے آسرا وظائف، طمانیت خوراک اسکیم، کلیان لکشمی، شادی مبارک، غریب افراد کیلئے ڈبل بیڈروم مکانات کی فراہمی کے ساتھ درج فہرست اقوام و قبائل پسماندہ اور اقلیتی طبقات کی فلاح و بہبود پر موثر عمل آوری کو یقینی بنانے کے اقدامات کئے ہیں۔ گورنر نے اس امید کا اظہار کیا کہ سال 2015 – 16 میں ریاست کی معیشت 11.7 فیصد کی شرح سے ترقی کرسکتی ہے جبکہ قومی سطح پر امکانی شرح ترقی 8.6 ہونے کا امکان ہے ۔ اسمبلی بجٹ سیشن کے آغاز کے موقع پر اسمبلی و کونسل کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے گورنر ای ایس ایل نرسمہن نے بتایا کہ حکومت اقلیتی طبقات کی بہبود اور ان کے تعلیمی معیارات کو بہتر بنانے کا بھی عہد رکھتی ہے اور اس مقصد کو پورا کرنے اقلیتی طبقہ کے طلبا و طالبات کیلئے تلنگانہ میں 70 نئے اقامتی مدارس کا قیام عمل میں لانے کی تجویز پر عمل آوری کے اقدامات کررہی ہے۔ اس کے علاوہ اقلیتی طبقہ کی لڑکیوں کی شادی کیلئے شادی مبارک اسکیم کے تحت ہر مسلم لڑکی کی شادی کیلئے 51,000/- روپئے کی مالی امداد فراہم کررہی ہے۔ گورنر نے تاہم اپنے خطبہ میں مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے حکومت کے وعدہ کا کوئی تذکرہ نہیں کیا ہے ۔ امید کی جا رہی تھی کہ خطبہ میں گورنر مسلم تحفظات کے مسئلہ پر مسلمانوںمیںپیدا ہونے والے اندیشوں کو دور کرینگے لیکن اس مسئلہ پر حکومت کے موقف کو واضح نہیںکیا گیا ۔ گورنر نے کہا کہ انہیں خوشی ہے کہ حکومت نے مہاراشٹرا کے ساتھ دریائے گوداوری کے پانی کی حصہ داری سے متعلق بین ریاستی مسائل کی خوشگوار ماحول میں یکسوئی کرلی ہے ۔ گورنر نے کہا کہ یہ اقدام ریاست میں تمام کی خوشحالی کیلئے آبی وسائل کے استعمال کو بہتر بنانے کی اچھی و شاندار مساعی ہے۔ مسٹر نرسمہن نے کہا کہ موازنہ درحقیقت مستقبل کا خاکہ ہوتا ہے اور حکومت نے اس سال موازنہ نہایت تفصیلی اور باریک بینی سے جائزہ لینے کے بعد مرتب کیا تاکہ تلنگانہ عوام کی ضروریات کی تکمیل اور ان کی توقعات کو پورا کرنے وسائل کے موثر استعمال کو یقینی بنانا جاسکے۔ انہوں نے بتایا کہ حکومت تلنگانہ کی ہمہ جہتی ترقی کیلئے کوشاں ہے۔ آبپاشی شعبہ پر اولین ترجیح دی جائے گی جبکہ ریاست کا بجٹ برائے سال 2016-17ء  مستقبل کیلئے روڈ میاپ جیسا ہوگا۔ 108 ایمبولینس سرویسیس کو مزید مستحکم بنایا جائیگا۔ غریب عوام کی بہتر طبی سہولتوں کی فراہمی کے اقدامات کئے جائینگے ۔ سرکاری دواخانوں میں انقلابی تبدیلیاں لائی جارہی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT