Saturday , August 19 2017
Home / اضلاع کی خبریں / ریاستی حکومت کی اسکیمات پر عدم عمل آوری

ریاستی حکومت کی اسکیمات پر عدم عمل آوری

سنگاریڈی میں سابق ڈپٹی چیف منسٹر دامودر راج نرسمہا کی پریس کانفرنس
سنگاریڈی 21 اگسٹ (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) وزیر اعلیٰ نت نئے اعلانات کررہے ہیں لیکن عمل آوری ندارد ہے۔ ان گمراہ کن اعلانات پر کے سی آر کو بہت جلد نوجوانان تلنگانہ کے غیض و غضب کا سامنا یقینی ہے۔ ان خیالات کا اظہار سابق نائب وزیر اعلیٰ دامودر راج نرسمہا نے راجیو پارک سنگاریڈی میں منعقدہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انھوں نے کہاکہ ٹی آر ایس کو کامیاب بنانے پر دلت طبقہ کے فرد کو چیف منسٹر بنانے، کنٹراکٹ آؤٹ سورسنگ رد کرنے اور ایک لاکھ ملازمتوں کے وعدے کئے گئے تھے لیکن ابھی تک ایک بھی وعدہ پورا نہیں کیا گیا۔ تلنگانہ کے عوام اور نوجوان باشعور ہیں وہ بغور مشاہدہ کررہے ہیں۔ وقت آنے پر ٹی آر ایس کو مناسب سبق سکھائیں گے۔ انھوں نے کہاکہ انتخابات کے دوران مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات کی فراہمی کا وعدہ کیا گیا تھا لیکن 16 ماہ گزر جانے کے باوجود بھی 12 فیصد مسلم تحفظات پر عمل آوری میں کوئی پہل نہیں کی گئی۔ انھوں نے کہاکہ ریاست کے کسانوں میں عدم اعتمادی دیکھی جارہی ہے۔ تلنگانہ میں ایک ہزار کسان خودکشی کرچکے ہیں۔ کسانوں کے مسائل کو حکومت نظرانداز کررہی ہے۔ ریاستی حکومت 16 ماہ میں ہی ملازمین کو تنخواہیں ادا کرنے سے قاصر ہوچکی ہے۔ صدر کانگریس ضلع میدک سنیتا لکشما ریڈی نے کہاکہ ملک میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کا انقلاب آنجہانی راجیو گاندھی کا کارنامہ ہے۔ مواضعات کو ترقی کی شاہراہ پر گامزن کرنے کے علاوہ ہندوستان کو دنیا کے ترقی یافتہ ممالک میں شامل کروانے میں راجیو گاندھی کا اہم رول رہا۔ انھوں نے ٹی آر ایس حکومت کی گراما جیوتی اسکیم کو بوگس قرار دیتے ہوئے کہاکہ چند ماہ قبل اعلان کردہ ہمارا گاؤں ہمارا منصوبہ پروگرام کا کیا ہوا؟ حکومت کی جانب سے مواضعات کو اپنانے کہا جارہا ہے تو پھر کیوں فنڈس کے بغیر ایسی اسکیمات کو سرکاری اسکیمات کا نام دیا جارہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT