Tuesday , September 26 2017
Home / Top Stories / ریاستی وزیر کا قافلہ مقام حادثہ سے تیزی سے گزر گیا

ریاستی وزیر کا قافلہ مقام حادثہ سے تیزی سے گزر گیا

سوشیل میڈیا پر ویڈیو وائرل ، میں بہت جلدی میں تھا : اے چندو لال
حیدرآباد 20 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) تلنگانہ کے ایک وزیر کا قافلہ سڑک حادثہ میں ہلاک ایک نوجوان کی نعش کے پاس سے گزر گیا اور انھوں نے رُک کر صورتحال کا جائزہ لینا بھی گوارہ نہیں کیا۔ یہ تصویر سوشیل میڈیا پر تیزی سے پھیل گئی اور انھیں عوامی برہمی کا سامنا کرنا پڑا۔ تفصیلات کے بموجب یہ حادثہ اتوار کی دوپہر حلقہ اسمبلی ملگ کے پالیم پیٹ ولیج میں نلا کلوا کراس روڈ پر پیش آیا۔ ایک تیز رفتار ٹرک نے موٹر سیکل کو بُری طرح ٹکر دے دی جس کے نتیجہ میں ٹی مدھو سدن چاری برسر موقع ہلاک ہوگیا۔ وہ اپنے دو دوستوں گوپی اور ستیش کے ہمراہ مندر جارہا تھا۔ اس حادثہ میں چاری برسر موقع ہلاک ہوگیا جبکہ پیچھے سوار دونوں دوست بُری طرح زخمی ہوگئے۔ ٹرک انھیں ٹکر دے کر فرار ہوگیا تھا۔ مقامی افراد وہاں جمع ہوگئے اور وہ کسی گاڑی کے انتظار میں تھے تاکہ چاری کی نعش اور دیگر دو زخمیوں کو ہاسپٹل منتقل کیا جاسکا۔ اِس دوران وزیر قبائیلی بہبود اے چندو لال کے کاروں کا قافلہ تیزی سے مقام حادثہ سے گزر گیا۔ ایک نوجوان نے اپنی شناخت مخفی رکھنے کی شرط پر بتایا کہ اُنھیں یقین ہے کہ وزیر چندولال نے جو کار کی اگلی نشست پر بیٹھے تھے، ضرور اِس حادثہ کو دیکھا ہوگا۔ اِس کے باوجود وہ تیزی سے گزر گئے۔ یہ انتہائی غیر انسانی حرکت ہے۔ سوشیل میڈیا پر انھیں کافی تنقیدوں کا سامنا کرنا پڑا۔ وزیر کا قافلہ گزرنے کے بعد پولیس مقام حادثہ پہونچی۔ چندو لال سے جب اِس ضمن میں ربط قائم کیا گیا تو انھوں نے بتایا کہ سڑک پر انھوں نے نعش دیکھی لیکن وہ رُک نہیں پائے کیوں کہ انھیں پالم پیٹ جلد پہونچنا تھا جہاں اُن کے رشتہ دار کی حالت نازک تھی ورنہ وہ ضرور اپنی گاڑی روک کر مدد کرتے۔ اُن میں انسانی ہمدردی ہے اور سب سے اہم بات یہ ہے کہ وہ میرے ہی حلقہ کے لوگ ہیں۔

TOPPOPULARRECENT