Thursday , August 24 2017
Home / شہر کی خبریں / ریاستی یونیورسٹیوں کے اسٹاف کی تنخواہ پر نظرثانی‘ جی او کی اجرائی

ریاستی یونیورسٹیوں کے اسٹاف کی تنخواہ پر نظرثانی‘ جی او کی اجرائی

حیدرآباد۔۔24جولائی ( سیاست ڈاٹ کام)حکومت تلنگانہ نے ریاستی سرکاری ملازمین کے بعد مختلف ریاستی یونیورسٹیوں کے غیر تدریسی ملازمین کی تنخواہ کی شرح میں اضافہ کردیاہے۔ جن میں جواہرلال نہروٹیکنالوجیکل یونیورسٹی اور آچاریہ جیہ شنکر اگریکلچرل یونیورسٹی بھی شامل ہیں۔ریاستی یونیورسٹیوں کے غیر تدریسی ملازمین کی تنخواہوںمیں یہ اضافہ دسویں پے ریویژن کمیشن کی سفارشات پر کیاجارہا ہے اور ریاستی حکومت نے اس خصوص میں جی او جاری کردیا ہے۔پی آر سی نے 21فیصد فٹمنٹ بینفٹ ادا کرنے کی سفارش کی ہے جس کے برخلاف ان ملازمین کو 43فیصد فٹمنٹ بینفٹ کی ادائیگی عمل میں لائی جارہی ہے۔ جہاں تک گرانی الائونس کا تعلق ہے یکم جولائی 2013 سے اسے کمیشن کی سفارش کے مطابق تنخواہ میں ضم کردیاجائے گا۔ جی او میں بتایاگیا ہے کہ نظرثانی شدہ تنخواہ کی شرحوں پر یکم جولائی 2013 سے استقدامی اثر کے ساتھ نظرثانی کی جائے گی اور مالیاتی فوائد 2جون 2014سے ملیںگے۔ 2جون 2014سے 28فروری 2015تک بقایاجات کو علحدہ جاری کیاجائے گا۔ جوائنٹ ایکشن کمیٹی آف ایمپلائز‘ ٹیچرس اینڈ ورکرس آف تلنگانہ اینڈ تلنگانہ سکریٹریٹ ایمپلائز کے دیگر مطالبات کو ریاستی حکومت کی جانب سے تشکیل دی جانے والی اعلیٰ اختیاری کمیٹی سے رجوع کیاجائے گا۔

TOPPOPULARRECENT