Saturday , October 21 2017
Home / شہر کی خبریں / ریاست آندھرا پردیش میں ’ ماں کی عظمت ‘ پر پروگرام

ریاست آندھرا پردیش میں ’ ماں کی عظمت ‘ پر پروگرام

بچوں کے ہاتھوں ماں کے پیر دھلائے جائیں گے ، حکومتی سطح پر تیاریاں
حیدرآباد۔12اپریل (سیاست نیوز) دین اسلام نے ماںکی عظمت بیان کرتے ہوئے یہ کہا ہے کہ ’ماں کے قدموں کے نیچے جنت ہے‘والدین کا احترام اور ان میں ماں کے احترام کے متعلق دین اسلام نے متعدد احکامات صادر کئے ہیں اور نبی آخرالزماں حضرت محمد مصطفی ﷺ نے ماں کی عظمت و احترام کے متعلق یہاں تک کہا ہے کہ اگر میں فرض نماز میں ہوتا اور مجھے میری ماں آواز دیتی تو میں نماز چھوڑ کر پہنچ جاتا۔سرکار دو عالم ؐ سیدالمرسلین رحمت اللعلمین ﷺ کی یہ تعلیمات صرف مسلمانوں کیلئے نہیں ہیں بلکہ اللہ کے رسول ؐ کی ہر تعلیم اور ہر عمل کائینات کے ہر ذی روح کے لئے ہے۔ ریاست آندھراپردیش میں ماں کی عزت و احترام کے لئے حکومت آندھرا پردیش کی جانب سے سرکاری طور پر اسکولوں میں ماں کے احترام کے عنوان سے ایک پروگرام شروع کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور اس پروگرام کے تحت ریاست کے تمام سرکاری اسکولوں میں تعلیم حاصل کرنے والے طلبہ کی ماؤوں کوسال میں ایک مرتبہ اسکول طلب کیا جائے گا اور بچوں کو اپنی ماؤوں کے پیر دھونے کیلئے کہا جائے گا تاکہ انہیں ماں کی عظمت کا احساس ہو سکے۔ سال گذشتہ انڈونیشیاء کے ایک اسکول میں طلبہ سے ان کی اپنی ماؤوں کے پیر دھونے لگوائے تھے اور اس ویڈیو کے سوشل میڈیا پر پھیلنے کے بعد اس عمل کو خوب تشہیر حاصل ہوئی تھی اور اب ریاست آندھراپردیش نے سرکاری اسکولوں میں اس پروگرام کے انعقاد کے سلسلہ میں احکام جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت نے اس مقصد کیلئے 2.5کروڑ مختص کرنے کا فیصلہ کیا ہے لیکن اس میں 1.25کروڑ ریاستی حکومت کی جانب سے ادا کئے جائیں گے اور مابقی نصف رقم اسکول انتظامیہ اور اساتذہ کے علاوہ عطیہ دہندگان سے حاصل کی جائے گی تاکہ ماں کی عظمت کو اجاگر کرنے کے منصوبہ میں تمام متعلقین کو شامل کیا جا سکے۔حکومت آندھرا پردیش کی جانب سے جاری کردہ احکامات کے مطابق تعلیمی سال 2017-18کے دوران ریاست کے 5000سرکاری اسکولوں میں اس پروگرام کا انعقاد عمل میں لایاجائے گا اور اس پروگرام کے ذریعہ نوجوان نسل میں اپنے والدین کے احترام کو فروغ دینے کے اقدامات کئے جائیں گے۔ چیف منسٹر آندھرا پردیش مسٹر این چندرا بابو نائیڈو انڈونیشیاء میں ہوئے اس پروگرام سے کافی متاثر تھے اور اب انہوں نے آندھرا پردیش میں اس پروگرام کو تمام سرکاری اسکولوں میں روشناس کروانے کے احکام جاری کردیئے ہیں۔محکمہ تعلیم آندھرا پردیش کے عہدیداروں کے بموجب ریاست آندھرا پردیش میں موجود سرکاری اسکولوں میں 15لاکھ طلبہ تعلیم حاصل کر رہے ہیں اورتمام طلبہ پراس پروگرام میں حصہ لینے کا لزوم عائد کیا گیا ہے۔حکومت کی جانب سے جاری کردہ ان احکامات کے متعلق عہدیداروں کا کہنا ہے کہ نوجوان نسل میں والدین کے احترام میں اضافہ اور ان کی قدر و منزلت کو سمجھنے کیلئے انہیں اسکول کے دور سے ہی عملی تربیت کی فراہمی ناگزیر ہے اور حکومت نے جو اقدام کیا ہے اس کے دور رس نتائج برآمد ہوں گے اور نوجوانو ںمیں اس بات کا احساس پیدا ہوگا کہ ان کے والدین نے کن مشکلات سے ان کے سکون کے انتظامات کئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT