Friday , July 21 2017
Home / شہر کی خبریں / ریاست تلنگانہ میں پراجکٹس کی تاخیر کے لیے کانگریس ذمہ دار

ریاست تلنگانہ میں پراجکٹس کی تاخیر کے لیے کانگریس ذمہ دار

حکومت پر بیجا الزامات لگاکر عوام میں الجھن پیدا کرنے کی کوشش : ٹی آر ایس
حیدرآباد۔13 جولائی (سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹریہ سمیتی نے الزام عائد کیا کہ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اتم کمار ریڈی پولی چنتلا اور دیگر پراجیکٹس کے بارے میں حکومت پر بے بنیاد الزامات عائد کررہے ہیں۔ ارکان قانون ساز کونسل کے پربھاکر اور ایس راجو نے آج میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ کانگریس قائدین اپنی بیان بازی کے ذریعہ عوام میں الجھن پیدا کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ پراجیکٹس کے آغاز میں تاخیر کے لیے کانگریس پارٹی ذمہ داری ہے جس نے 2014ء تک پولی چنتلا ہائیڈل پراجیکٹ کے کام کا آغاز تک نہیں کیا۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس دور حکومت میں پراجیکٹس کے آغاز میں عدم دلچسپی کے باعث موجودہ تلنگانہ حکومت پر کافی بوجھ میں اضافہ ہوچکا ہے اور پراجیکٹس کی مالیت سرکاری خزانہ پر اثر انداز ہورہی ہے۔ پربھاکر نے کہا کہ پولی چنتلا ہائیڈل پراجیکٹ کی رپورٹ 2006ء میں تیار کرلی گئی تھی لیکن اس وقت کی حکومت نے 2014ء تک تعمیری کام کا آغاز نہیں کیا۔ انہوں نے کہاکہ اتم کمار ریڈی حقائق جانتے ہوئے بھی عوام کو گمراہ کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آندھرائی حکمرانوں کے زیر اثر کام کرنے والے تلنگانہ کے کانگریس قائدین نے کبھی بھی عوام کے حق میں آواز نہیں اٹھائی۔ برخلاف اس کے اپنے مفادات کی تکمیل پر توجہ مرکوز کی جس کے نتیجہ میں تلنگانہ کے ساتھ مسلسل نا انصافی ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پولی چنتلا پراجیکٹ کے زیر آب آنے والے علاقوں کے متاثرہ کسانوں کو معاوضہ کی ادائیگی کے سلسلہ میں بھی تلنگانہ کے ساتھ امتیازی سلوک کیا گیا۔ اتم کمار ریڈی اپنے ضلع نلگنڈہ کے کسانوں کو مناسب معاوضہ دلانے میں ناکام رہے۔ آندھرائی کسانوں کو فی ایکڑ 3 لاکھ روپئے معاوضہ ادا کیا گیا جبکہ تلنگانہ کے کسانوں کو صرف ایک لاکھ روپئے فی ایکڑ معاوضہ دیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ پردیش کانگریس کے صدر اپنے علاقے کے کسانوں کو انصاف نہیں دلا سکے ان سے تلنگانہ عوام انصاف کی کیا توقع کرسکتے ہیں۔ کے پربھاکر نے اتم کمار ریڈی سے مطالبہ کیا کہ وہ حکومت پر عائد کردہ الزامات سے فوری دستبرداری اختیار کرے۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت نے گزشتہ تین برسوں میں پراجیکٹس کی تکمیل کے سلسلہ میں پیشرفت کی ہے لیکن اپوزیشن جماعتیں عدالتوں میں مقدمات کے ذریعہ تکمیل کی راہ میں رکاوٹ پیدا کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پراجیکٹس کی راہ میں رکاوٹ پیدا کرنا دراصل تلنگانہ عوام سے دشمنی کے مترادف ہے اور ایسے قائدین کا شمار مخالف تلنگانہ عناصر میں ہوگا۔ انہوں نے کانگریس اور دیگر اپوزیشن جماعتوں سے اپیل کی کہ وہ حکومت کے ترقیاتی کاموں کا اعتراف کرتے ہوئے غیر ضروری مخالفت کا رویہ ترک کردیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT