Thursday , June 29 2017
Home / شہر کی خبریں / ریاست میں ایمسیٹ امتحان ‘ اسکام سیٹ میں تبدیل

ریاست میں ایمسیٹ امتحان ‘ اسکام سیٹ میں تبدیل

کے ٹی آر کے دوست کی کمپنی کو ایمسیٹ کی ذمہ داری دینے پر تنقید ۔ کانگریس ترجمان کے مہیش
حیدرآباد ۔ 21 ۔ فروری : ( سیاست نیوز ) : تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی نے حکومت کی جانب سے انعقاد کیے جانے والا ایمسیٹ امتحان اسکام سیٹ میں تبدیل ہوجانے کا دعویٰ کرتے ہوئے طلبہ کی زندگیوں سے کھلواڑ کرنے کا ٹی آر ایس حکومت پر الزام عائد کیا ۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ترجمان کے مہیش نے کہا کہ گذشتہ سال منعقد کئے گئے ایمسیٹ امتحانات کے پرچوں کا افشا بہت بڑے اسکام میں تبدیل ہوگیا ہے ۔ حکمرانوں کی تائید و حمایت کے بغیر اسطرح کا اسکام ممکن نہیں ہے ۔ جس سے طلبہ اور ان کے سرپرستوں کو کئی دشواریوں سے دوچار ہونا پڑا ہے انہوں نے کہا کہ ایمسیٹ امتحانات کا انعقاد کرنے کے لیے ٹنڈر طلب کرنے کے بجائے میگنیٹک انفوٹیک کمپنی کو امتحانات کے انعقاد کی ذمہ داری سونپی گئی ۔ 2014 میں طلبہ کی میرٹ لسٹ کی تیاری میں تاخیر کے لیے بھی یہی خانگی کمپنی ذمہ دار ہے ۔ 2016 کے ایمسیٹ امتحانات میں کام نہ کرنے والے بائیو میٹرک سربراہ کرنے والی میگنیٹک انفوٹیک کمپنی کو بلیک لسٹ کرنے کے بجائے 2017 ایمسیٹ کے انعقاد کے لیے بھی ٹنڈر طلب کیے گئے بغیر ذمہ داری سونپی گئی ہے ۔ صرف چیف منسٹر کے فرزند ریاستی وزیر آئی ٹی کے ٹی آر کے دوست کی کمپنی ہونے کی وجہ سے اسکو غیر ضروری نہ صرف فروغ دیا جارہا ہے بلکہ ایمسیٹ کے ساتھ ساتھ لاسیٹ ، پی جی سیٹ ، ایڈسیٹ اور آئی سیٹ جیسے اہم مسابقتی امتحانات کے انعقاد کی ذمہ داری اسی بدنام کمپنی کے حوالے کی گئی ہے ۔ جس سے طلباء اور ان کے سرپرستوں میں تشویش کی لہر پائی جاتی ہے ۔ ترجمان تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی نے کہا کہ ایمسیٹ II پرچوں کے افشاء کی تحقیقات صحیح ڈھنگ سے نہیں کرائی گئی اگر کرائی گئی ہوتی تو صدر نشین ہائیر ایجوکیشن جیل میں ہوتے ۔ اس سارے معاملے میں کسی ایک عہدیدار کو بھی نوٹس نہیں دی گئی ۔ ایمسیٹ II پرچوں کے افشاں کا اصل ملزم جس کا بہار سے تعلق ہے ۔ اس کی پولیس تحویل میں موت واقع ہوجانے پر عوام میں کئی شبہات ہے ۔ ملزم نے مرنے سے قبل کہا تھا کہ اگر وہ منھ کھولتا ہے تو اہم شخصیتیں منظر عام پر آجائیں گے ۔ لیکن اس کے منہ کھولنے سے قبل اس کو ہمیشہ کے لیے خاموش کرادیا گیا ۔ کے مہیش نے ٹنڈر طلب کیے بغیر ایمسیٹ امتحانات کا انعقاد کرنے کی ذمہ داری فراہم کرنے کے خلاف چیف منسٹر سے فوری مداخلت کرنے کا مطالبہ کیا ۔ تحقیقات کی تکمیل سے قبل ایمسیٹ 2017 کا نوٹیفیکشن جاری کرنے کی مخالفت کی ۔ بصورت دیگر کونسل ہائیر ایجوکیشن پر احتجاجی دھرنا منظم کرنے کا انتباہ دیا ۔۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT