Friday , August 18 2017
Home / شہر کی خبریں / ریاست میں 10 سال کے دوران 61 نئے سرکاری ڈگری کالجس

ریاست میں 10 سال کے دوران 61 نئے سرکاری ڈگری کالجس

گولکنڈہ اور سیتا پھل منڈی میں بھی 2 نئے کالجس کا قیام : ڈپٹی چیف منسٹر
حیدرآباد۔27ڈسمبر(سیاست نیوز) ریاست میں گذشتہ 10برسوں کے دوران 61نئے سرکاری ڈگری کالجس کا قیام عمل میں لایا گیا ہے اور اس میں حیدرآباد میں قائم کئے گئے 2نئے ڈگری کالجس بھی شامل ہیں۔ڈپٹی چیف منسٹر مسٹر کڈیم سری ہری نے قانون ساز کونسل میں وقفہ سوالات کے دوران ریاست میں گذشتہ دس برس کے دوران قائم کئے گئے نئے ڈگری کالجس کی تفصیل بتا رہے تھے۔انہوں نے بتایا کہ ریاست میں 61نئے ڈگری کالجس قام کئے گئے ہیں اور حکومت کی جانب سے نظام آباد ‘ ڈچپلیکے علاوہ دیگر علاقوں میں نئے کالجس کے قیام کا منصوبہ زیر غور ہے۔مسٹر کڈیم سری ہری جو رکن قانون ساز کونسل مسٹر وی گنگا دہر گوڑ کی جانب سے اٹھائے گئے سوال کا جواب دے رہے تھے نے بتایا کہ نظام آباد ‘ ڈچپلی کے علاوہ دیگر علاقوں میں بھی حکومت کی جانب سے نئے ڈگری کالجس کے آغاز کا منصوبہ زیر غور ہے لیکن تاحال ان منصوبوں کو قطعیت نہیں دی گئی ہے ۔انہوں نے ڈگری کالجس کے قیام کے سلسلہ میں تفصیلی جواب کے دوران بتایا کہ حیدرآباد میں 2نئے کالجس قائم کئے گئے ہیں جن میں گولکنڈہ اور سیتا پھل منڈی کالجس شامل ہیں جو گذشتہ دس برس کے دوران قائم کئے گئے ہیں۔ی طرح وقارآباد میں دو کالجس کا قیام عمل میںلایا گیا ہے جن میں کوڑنگل و تانڈور ڈگری کالج شامل ہیں۔ڈپٹی چیف منسٹر نے نئے و پرانے اضلاع میں قائم کئے گئے ڈگری کالجس کی مکمل تفصیلات پیش کرتے ہوئے کہا کہ ریاست میں گذشتہ 10برسوں کے دوران قام کئے گئے 61ڈگری کالجس کے علاوہ نئے اضلاع میں نئے کالجس کے قیام کے متعلق غور کیا جا رہا ہے اور اس منصوبہ کو جلد قطعیت دیدی جائے گی تاکہ اعلی تعلیم کے حصول میں حائل رکاوٹوں کو دور کیا جا سکے۔مسٹر کڈیم سری ہری نے سال 2015تک قائم کئے گئے کالجس کی ضلع واری اور دس سال کے دوران سال کے اعتبار سے قائم کئے گئے کالجس کی مفصل رپورٹ ایوان میں پیش کرتے ہوئے کہا کہ ان کی حکومت مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی زیر قیادت تعلیمی میدان میں نوجوانوں کو معیاری سہولتوں کی فراہمی کے عہد کی پابند ہے۔انہوں نے بتایا کہ ریاست میں تعلیمی ترقی کیلئے حکومت کی جانب سے متعدد اقدامات کئے جارہے ہیں اور ان اقدامات کا سلسلہ جاری رہے گا۔

TOPPOPULARRECENT