Monday , May 1 2017
Home / شہر کی خبریں / ریاست میں 4797 پرائمری ہیلت سب مراکز

ریاست میں 4797 پرائمری ہیلت سب مراکز

سرکاری عمارتوں کی تعمیر کے لیے منصوبہ بندی، لکشما ریڈی کا بیان
حیدرآباد۔20ڈسمبر (سیاست نیوز) ریاست میں 4797پرائمری ہیلت سب  مراکز چلائے جا رہے ہیں جن میں 1642مراکز سرکاری عمارتوں میں ہے ںاور مابقی 3155سب مراکز خانگی عمارتوں میں ہیں جنہیں سرکاری عمارتوں کی تعمیر کے ذریعہ ان میں منتقلی پر غور کیا جا رہا ہے اور اس سلسلہ میں منصوبہ بندی کا عمل جاری ہے۔مسٹر کے لکشما ریڈی ریاستی وزیر صحت نے رکن قانون ساز کونسل مسٹر وی بھوپال ریڈی کی جانب سے کئے گئے سوالا کا جواب دیتے ہوئے یہ بات کہی۔انہوں نے بتایا کہ ریاست میں موجود ابتدائی طبی امداد کے مراکز میں آلات و ادویات کی کمی کی شکایت بھی درست نہیں ہ۔ریاستی وزیر صحت کے مطابق ان ابتدائی طبی امداد کے مراکز میں خدمات انجام دینے والے عملہ کو تنخواہیں سرکاری احکام اور جو ضابطہ تیار کیا گیا ہے اس کے مطابق ہی دی جا رہی ہیں ۔مسٹر وی بھوپال ریڈی نے ریاست میں ابتدائی طبی امداد کے مراکز کی صورتحال بالخصوص ان مراکز میں عملہ اور ادویات کی کمی کے متعلق شکایات کی جانب متوجہ کرواتے ہوئے حکومت سے استفسار کیا کہ کیا واقعی ان مراکز میں مریضوں کو بنیادی سہولتو ںکی فراہمی عمل میں نہیں لائی جاتی ؟ انہوں نے ریاست میں چلائے جانے والے پرائمری ہیلت سب مراکز میں اقل ترنے سہولتوں کی عدم فراہمی کے متعلق دریافت کیا جس پر ریاستی وزیر صحت نے کہا کہ ایسا نہیں ہے بلکہ ان مراکز کو بہتر انداز میں چلایا جا رہا ہے اور ان میں کئی مراکز سرکاری عمارتوں میں چلائے جا رہے ہیں جبکہ مابقی مراکز کو سرکاری عمارتوں میں منتقل کرنے کی منصوبہ بندی کی جا رہی ہے۔انہوں نے مزید بتایا کہ محکمہ صحت کے تحت جو ملازمین ان مراکز میںآؤٹ سورسنگ ملازمین کی حیثیت سے خدمات انجام دے رہے ہیں انہیں بھی حکومت کی جانب سے دیگر محکمہ جات کے آؤٹ سورسنگ ملازمین کے مساوی تنخواہیں ادا کی جا رہی ہیں۔مسٹر لکشما ریڈی نے کہا کہ حکومت کی جانب سے فی الفور ان مراکز میں نئے تقررات یا عمل کی تعداد میں اضافہ کا کوئی منصوبہ نہیں ہے اور نہ موجودہ سہولتوں میں کوئی اضافہ کا ارادہ ہے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT