Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / ریاست کی منادر کی آمدنی میں اضافہ کی کوشش کے بہتر نتائج

ریاست کی منادر کی آمدنی میں اضافہ کی کوشش کے بہتر نتائج

سرکاری سطح پر ترقیاتی کاموں سے آمدنی میں ریکارڈ اضافہ
حیدرآباد۔20ڈسمبر (سیاست نیوز) ریاست کی منادر کی آمدنی میں اضافہ کے لئے حکومت کی جانب سے کئے جانے والے اقدامات کے مثبت نتائج برآمد ہو رہے ہیں۔ ریاستی وزیر امکنہ و قانون و انڈومنٹ مسٹر اندران کرن ریڈی نے تلنگانہ قانون ساز کونسل میں وقفہ سوالات کے دوران مسٹر پی سدھاکرریڈی رکن قانون ساز کونسل کی جانب سے کئے گئے سوال کے جواب کے دوران یہ بات بتائی۔انہوں نے بتایا کہ ریاست میں مندروں کی ترقی کیلئے سرکاری سطح پر اقدامات کئے جا رہے ہیں اور ان اقدامات کے نتیجہ میں ریاست کی کئی منادر کی آمدنی میں بھی اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔ مسٹر اندرا کرن ریڈی نے ریاست کی مختلف منادر کی آمدنی کی رپورٹ پیش کرتے ہوئے کہا کہ ویملواڑہ میں واقع راجہ راجیشور سوامی مندر کی آمدنی مالی سال 2014-15کے دوران 70کروڑ8لاکھ21ہزار 471ریکارڈ کی گئی تھی جس میں مالی سال 2015-16کے دوران زبردست اضافہ دیکھا گیا اور اس کی آمدنی 85کروڑ 87لاکھ 4ہزار 367ہو چکی ہے۔ یادگیر گٹہ میں واقع مندر کی آمدنی کی تفصیلات پیش کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ مالی سال 2014-15 کے دوران اس مندر کی آمدنی 73کروڑ3لاکھ 16ہزار49روپئے ریکارڈ کی گئی تھی جبکہ سال 2015-16کے دوران اس مندر کی آمدنی 77کروڑ 80َٓلاکھ77 ہزار 950ریکارڈ کی گئی ہے۔سکندرآباد گنیش مندر کی آمدنی کے متعلق پیش کردہ ریکارڈ کے مطابق سال 2014-15میںآمدنی 6کروڑ 73َٓلاکھ 19ہزار 865روپئے تھی اور مالی سال 2015-16 میں اس مندر کی آمدنی 6کروڑ97لاکھ30ہزار 102ہو چکی ہے۔ اسی طرح انہو ںنے ریاست کے دیگر منادر کی آمدنی کی تفصیلات پیش کرتے ہوئے کہا کہ ریاست میں حکومت کی جانب سے منادر کے فروغ کے لئے کئے جانے والے اقدامات کے سبب ان منادر کی آمدنی میں بتدریج اضافہ ریکارڈ کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ بھدراچلم میں واقع مندر کی آمدنی میں بھی بھاری اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے ۔ سال 2014-15کے دوران اس مندر کی آمدنی 29کروڑ 86لاکھ91ہزار 836تھی اور مالی سال 2015-16میں اس مندر کی آمدنی 38کروڑ 76لاکھ 80ہزار 936روپئے تک پہنچ چکی ہے۔

TOPPOPULARRECENT