Wednesday , August 16 2017
Home / شہر کی خبریں / ریاست گیر سطح پر ای پٹہ دار پاس بک کی اجرائی

ریاست گیر سطح پر ای پٹہ دار پاس بک کی اجرائی

اراضیات کے مالکان کا ریکارڈ اکٹھا کرنے کا عمل ، محکمہ مال کے عہدیداروں سے مشاورت
حیدرآباد۔8اگسٹ (سیاست نیوز) مرکزی حکومت کی جانب سے ای۔پراپرٹی پاس بک منصوبہ پر عمل آوری کی جاتی ہے یا نہیں یہ تو ابھی طئے نہیں ہے لیکن ریاستی حکومت نے ریاست گیر سطح پر ای۔پٹہ دار پاس بک جاری کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ محکمہ مال کے عہدیداروں کے مطابق ریاستی حکومت کی جانب سے اراضیات کے مالکان کے ریکارڈ اکٹھا کی جائیں گی اور ٹکنالوجی کے استعمال کے ذریعہ جائیداد رکھنے والوں کی مکمل تفصیلات حاصل کرتے ہوئے انہیں ای۔پٹہ دار پاس بک جاری کئے جائیں گے۔ باوثوق ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے مطابق ریاستی حکومت نے محکمہ مال کے عہدیداروں سے مشاورت کے بعد اس بات کا پتہ لگانے کا فیصلہ کیا ہے کہ ریاست میں کتنے لوگ اراضیات کے مالک ہیں اور کتنی جائیدادیں ان کی اپنی ہیں اور کتنی اراضیات ایسی ہیں جو بے نامی ہیں ۔ ریاستی حکومت نے ای ۔ پٹہ دار پاس بک منصوبہ کو عملی جامہ پہنانے کے لئے محکمہ مال کے عہدیداروں کو ایک ماہ کی مہلت فراہم کی ہے تاکہ اس مہلت کے دوران وہ ٹیکنالوجی کے تمام امور سے واقفیت حاصل کرلیں اور اس منصوبہ کو عملی جامہ پہناتے ہوئے خود اپنا اور عوام کا وقت بچانے کے علاوہ ریاست کی سرکاری اراضیات کو محفوظ کرنے کے ساتھ ساتھ ریاست کی آمدنی میں فروغ کے اقدامات پر توجہ مرکوز کریں۔ سرکاری منصوبہ کے مطابق پٹہ پاس بک‘ پہانی اور مالکین کی تفصیلات ڈیجٹلائزکی جائیں گی اور اسے حکومت کے حوالے کیاجائے گا۔ حکومت کے ذرائع کا کہنا ہے کہ ریاست میں اراضیات کے ریکارڈس کو محفوظ بنانے کے ساتھ ساتھ ای ۔ پٹہ دار پاس بک کی اجرائی کی صورت میں اراضیات کے تحفظ کے علاوہ مالکین جائیداد کی مکمل تفصیلات حکومت کے پاس موجود رہے گی اور ان تفصیلات کی بنیاد پر یہ کہا جا سکتا ہے کہ ریاستی حکومت کی ملکیت اور سرکاری محکمہ جات کی ملکیت میں کتنی اراضیات موجود ہیں اور کن اراضیات کا کیا استعمال کیا جا سکتا ہے۔ ریاستی حکومت کی جانب سے ای۔پٹہ دار پراپرٹی پاس بک کی منصوبہ بندی سے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ ریاستی حکومت نے مرکزی حکومت کے منصوبوں کی بنیاد پر ہی ای۔ پٹہ دار پاس بک کی اجرائی کا فیصلہ کیا ہے تاکہ ریاست میں اراضیات حقیقی مالکین تک پہنچا جا سکے کیونکہ ریاستی حکومت نے شہری علاقوں میں موجود کھلی اراضیات پر ٹیکس عائد کرتے ہوئے ان جائیدادوں کے مالکین سے ٹیکس وصولی کا عمل شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور ٹیکس وصولی کا عمل شروع ہونے کے بعد حقیقی مالکین کی تفصیلات سامنے آنے لگ جائیں گی۔

TOPPOPULARRECENT