Saturday , September 23 2017
Home / ہندوستان / ریزرو بینک اور بینکنگ پر عوام کا اعتماد ختم

ریزرو بینک اور بینکنگ پر عوام کا اعتماد ختم

مودی کی تباہ کن تحریک ، سرمایہ دار نئی کرنسی سے مالا مال : کانگریس
کوچی ۔ 18ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) کانگریس نے آج آر بی آئی اور ملک کی بینکوں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ عوام کا ملک کے بینکنگ نظام اور آر بی آئی پر سے اعتماد ختم ہوگیا ہے ۔ وزیراعظم نریندر مودی کی ’’تباہ کن تحریک ‘‘ اعلیٰ مالیتی کرنسی نوٹوں کی تنسیخ کے بعد یہ اعتماد ختم ہوچکا ہے ۔ کانگریس کے سینئر قائد اور پارٹی کے ترجمان اعلیٰ آنند شرما نے الزام عائد کیا کہ کروڑوں روپئے مالیتی نئے تبع شدہ کرنسی نوٹس باہر آگئے ہیں لیکن بینکوں میں پچھلے دروازہ سے انہیں سرمایہ داروں کے حوالے کردیا جاتا ہے ۔ جب کہ  عام آدمی کو اپنی رقم واپس حاصل کرنے کے حق سے محروم کردیا گیا ہے ۔ حالانکہ انہوں نے یہ رقم سخت محنت کے بعد کمائی تھی اور اسے ان بینکوں میں جمع کروا دیا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ عوام کا ہندوستان کے بینکنگ نظام پر سے اعتماد اُٹھ چکا ہے جب سے کہ مالی اور معاشی بحران شروع ہوا ‘ ہندوستانی بینکوں میں اپنے صبر و تحمل اور بااعتماد ہونے کا ثبوت دیا تھا ۔ ریزرو بینک آف انڈیا نے آج اپنی ایک ناقابل فراموش ساکھ قائم کی ہے۔ ہندوستانی بینکنگ نظام سے عوام کا بھروسہ چور چور ہوگیا ہے ۔ آر بی آئی کی ساکھ داغدار ہوچکی ہے۔ آنند شرما ایک پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے ۔ سابق مرکزی وزیر تجارت نے کہا کہ میں آپ سے ایسا کیوں کہہ رہا ہوں ‘ جولوگ دن بھر سخت محنت کرتے ہیں اور چھوٹی چھوٹی رقمیں بچاتے ہیں انہیں بینکوں میں جمع کرتے ہیں کیونکہ آپ کو یقین ہوتا تھا کہ رقم محفوظ ہیں‘ جب بھی مجھے ضرورت ہوگی میں بینک جاکر اُسے حاصل کرلوں گا لیکن اب بینک پیسے نہیں دے رہی ہے کیونکہ رقم نہیں آرہی ہیں یا پھر کاؤنٹر پر موجود نہیں ہے ۔ اے ٹی ایمس خالی ہوچکے ہیں جب کہ پچھلے دروازہ سے کروڑوں روپیوں کی نئی کرنسی باہر جارہی ہے ‘ پھر لوگ کیسے اعتماد کرسکتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستانی بینکوں پر اعتماد بحال ہونے کیلئے طویل عرصہ لگے گا ۔ کونسے اخلاقی اقدار موجود ہیں اور جب آپ سے خود آپ کا پیسہ چھین لیا جائے تو آپ کہیں گے کہ پیسے وہاں ہے فکر مت کرو رقم محفوظ ہے لیکن یہ رقم محفوظ ہو جیسا کہ حکومت کہتی ہے تو ہمارا اعتماد اُس وقت ختم ہوجاتا ہے جب کہ ہم اسے حاصل نہیں کرسکتے ۔ اس اعتماد کی بحالی کیلئے طویل عرصہ لگے گا ۔ وزیراعظم کو اس کا جواب دینا ہوگا ۔ بی جے پی کو جس نے شہریوں کی زندگی میں ہلچل مچادی ہے اور اُن کی مصائب کی ذمہ دار ہیں ۔ معیشت تباہ کردی گئی ہے ۔ 111سے زیادہ افراد ہلاک ہوچکے ہیں لیکن بی جے پی ملک اور اس کے عوام کوگمراہ کررہی ہے ۔ وزیراعظم کو ان سب سوالوں کا جواب دینا ہوگا ۔ عوام کی عدالت انہیں انصاف کے کٹہرے میں کھڑا کرے گی کیونکہ انہوں نے ایک تباہ کن تحریک چلائی ہے۔

TOPPOPULARRECENT