Thursday , August 24 2017
Home / جرائم و حادثات / ریزرو کانسٹبل خود ساختہ انسپکٹر پولیس کی شکل میں گرفتار

ریزرو کانسٹبل خود ساختہ انسپکٹر پولیس کی شکل میں گرفتار

حیدرآباد /13 اگست ( سیاست نیوز ) سائبرآباد پولیس نے خود کو انسپکٹر ظاہر کرتے ہوئے عوام کو پریشان کرنے والے ایک کانسٹیبل کو گرفتار کرلیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ ریزرو کانسٹیبل سری رنگاراجو جس کی عمر 32 سال بتائی گئی ہے ۔ پولیس نے آدرش نگر علاقہ سے اس کانسٹیبل کو گرفتار کرلیا ۔ سال 2013 مارچ کا کانسٹیبل راجو تلنگانہ اسٹیٹ پولیس فرسٹ بٹالین سے وابستہ تھا ۔ جو چلکانگر آدرشن نگر میں رہتا تھا ۔ اس نے ایک اسکول ٹیچر سے محبت کی تھی ۔ اور اس ٹیچر کی شادی کے نام پر استحصال کر رہا تھا ۔ جس کی شکایت پر کانسٹیبل سری رنگاراجو کی اصلیت منظر عام پر آگئی ۔ جو کانسٹیبل ہونے کے باوجود انسپکٹر کی وردی پہنکر عوام کو ہراساں پریشان کر رہا تھا ۔ کسی کے پوچھنے پر خود کو اے سی پی سے وابستہ انسپکٹر ظاہر کرتا تھا ۔ اس نے سال 2009 اور سال 2011 میں دو مرتبہ سب انسپکٹر کے امتحان کیلئے کوشش کی تھی ۔جس میں ناکامی کے بعد اس نے انسپکٹر کا یونیفارم تیار کرلیا اور سال 2013 میں کانسٹیبل کی حیثیت سے شمولیت اختیار کرلی ۔ سال 2014 میں اس کی پہچان ایک اسکول ٹیچر سے ہوئی جبکہ اس خودساختہ انسپکٹر کی شادی سال 2011 میں وجئے واڑہ کی ساکن لتا سے ہوئی تھی اور اس کے دو بچے ہیں ۔ اسکول ٹیچر نے دو لاکھ روپئے اپنے عاشق انسپکٹر کو دئے جس کے ذریعہ اس نے اسکارپیو گاڑی خریدی اور شان میں مزید اضافہ ہوگیا ۔ جو اس کیلئے درست ثابت نہ ہوا۔ گذشتہ چند روز سے یہ خاتون ٹیچر شادی کیلئے اصرار کر رہی تھی جس کی ٹال مٹول سے تنگ آکر اس نے شکایت کرائی ۔ پولیس نے اپنے ہی شعبہ سے وابستہ شخص کو گرفتار کرلیا ۔

TOPPOPULARRECENT