Tuesday , April 25 2017
Home / کھیل کی خبریں / ریفری کے جانبدارانہ فیصلوں پر بایرن میونخ برہم

ریفری کے جانبدارانہ فیصلوں پر بایرن میونخ برہم

میڈرڈ۔20 اپریل (سیاست ڈاٹ کام ) یوئیفا چیمپیئنز لیگ میں ریفری کے جانبدارانہ فیصلوں کے سبب کوارٹر فائنل میں شکست کے بعد ایونٹ سے باہر ہونے والی جرمن چیمپیئن بایرن میونخ نے غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے فٹبال میں ویڈیو کی مدد کا مطالبہ کردیا ہے۔ میڈرڈ میں کھیلے گئے ایونٹ کے کوارٹر فائنل کے دوسرے مرحلے میں بایرن میونخ اور میزبان ریئل میڈرڈ کی ٹیمیں مدمقابل تھیں۔میڈرڈ نے میونخ میں ہونے والے کوارٹر فائنل کے پہلے لیگ میں 2-1 سے کامیابی حاصل کی تھی اور اسی برتری کے ساتھ وہ اپنے ہوم گراؤنڈ پر میدان میں اتری۔میچ میں بایرن میونخ کی ٹیم نے شاندار کھیل کا مظاہرہ کیا لیکن ریفری کے متعدد جانبدارانہ فیصلوں نے ان کی محنت پر پانی پھیر دیا۔میچ میں بایرن میونخ کو 2-1 کی برتری حاصل تھی اور مجموعی گول اوسط کی بنیاد پر یہ مقابلہ برابر نظر آ رہا تھا کہ کھیل کے 84ویں منٹ میں چلی سے تعلق رکھنے والے بایرن کے مڈفیلڈر اور اسٹار کھلاڑی ویڈال کو ریفری نے میچ کا دوسرا پیلا کارڈ دکھا کر میدان سے باہر جانے پر مجبور کردیا حالانکہ ری پلے سے صاف ظاہر تھا کہ یہ فاؤل نہیں تھا۔اس فیصلے کے سبب مہمان ٹیم ویڈال کی خدمات سے محروم ہو گئی اور اضافی وقت میں میڈرڈ نے اس کا بھرپور فائدہ اٹھاتے ہوئے اپنی برتری ثابت کردی۔لیکن امپائر کی جانبداری صرف یہیں تک محدود نہ رہی بلکہ کھیل کے 105ویں منٹ میں رونالڈو کی جانب سے گول کو آف سائیڈ قرار نہ دیا گیا حالانکہ وہ واضح طور پر آف سائیڈ تھے۔اس سے قبل ریفری نے کھیل کے دوسرے ہاف کے دوران روبرٹ لیون ڈاؤسکی کے خلاف غلط آف سائیڈ دیا تھا جبکہ ریفری نے میزبان ٹیم کے کھلاڑی کیسے میرو کی جانب سے ارجن روبن کو غلط انداز سے ٹیکل کرنے پر بھی کوئی کارروائی نہیں کی حالانکہ وہ واضح طور پر ریڈ کارڈ کے مستحق تھے کیونکہ ان کو پہلے ہی ایک پیلا کارڈ دکھایا جا چکا تھا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT