Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / ریل روکو احتجاج۔تلنگانہ کے دو وزرا عدالت میں حاضر

ریل روکو احتجاج۔تلنگانہ کے دو وزرا عدالت میں حاضر

حیدرآباد 19جولائی (یواین آئی ) تلنگانہ کے وزرا این نرسمہاریڈی اور پدما راو ، ریل روکو معاملہ کے سلسلہ میں ریلوے کورٹ میں حاضر ہوئے ۔عدالت نے اس معاملہ کی آئندہ سماعت 26جولائی تک ملتوی کردی ۔2011میں تلنگانہ کو ریاست کا درجہ دینے کے مطالبہ کے ساتھ چلائی گئی تحریک کے دوران مختلف جماعتوں کی اپیل پر مولاعلی میں ریل روکو احتجاج کیا گیا تھا ۔اس وقت ریل کو روکنے پر 14افراد کے خلاف معاملہ درج کیا گیا تھا ،اس معاملہ کی سماعت گزشتہ چھ سال سے ریلوے کورٹ میں جاری ہے ۔اس سلسلہ میں آج یہ دونوں وزرا عدالت میں حاضر ہوئے ۔اس موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے این نرسمہا ریڈی نے الزام لگایا کہ ریلوے پولیس نے گوداوری ریل کو روکنے کا جھوٹا مقدمہ درج کیا تھا۔انہوں نے کہاکہ وہ ریلوے جنکشن ضرور گئے تھے تاہم انہوں نے ریل کو نہیں روکا ۔اس بات سے عدالت کو واقف کروایا جائے گا۔

بس خدمات میں اضافہ کا مطالبہ، طلبہ کا دھرنا
حیدرآباد 19جولائی (یواین آئی ) تلنگانہ کے ضلع رنگاریڈی کے پوڈورومنڈل کے چیوڑلہ منڈل کے بعض دیہاتوں سے تعلق رکھنے والے طلبہ نے سڑک پر دھرنا دیتے ہوئے ان کے دیہاتوں سے منڈل مرکز تک چلائی جانے والی آرٹی سی بس خدمات کو ناکافی قرار دیتے ہوئے اس میں اضافہ کا مطالبہ کیا ۔یہ طلبہ سڑک پربیٹھ گئے جس کے سبب تقریبا د وکیلو میٹر تک ٹریفک جام رہی ۔وقار آباد ، پرگی ڈپو کے ڈی ایم کے وہاں پہنچنے تک احتجاج جاری رکھنے کا ان طلبہ نے انتباہ دیا۔طلبہ کے اس دھرنے کے سبب گاڑی سواروں کو کافی مشکلات کاسامناکرنا پڑا۔ طلبہ نے اپنے مطالبہ کی حمایت میں نعرے بازی کی ۔طلبہ نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ بس خدمات میں فوری طورپر اضافہ کیا جائے تاکہ ان کو سہولت ہوسکے ۔

TOPPOPULARRECENT