Friday , July 28 2017
Home / ہندوستان / ریپ کیخلاف طالبہ کی انوکھی مزاحمت، چیف منسٹر نازاں

ریپ کیخلاف طالبہ کی انوکھی مزاحمت، چیف منسٹر نازاں

تھروننتاپورم 20 مئی (سیاست ڈاٹ کام) قانون کی 23 سالہ طالبہ نے ایک شخص کا عضو تناسل کاٹ دیا جب اُس نے بتایا جاتا ہے کہ پیٹا میں واقع اپنے مکان میں اُس کا ریپ کرنے کی کوشش کی۔ پولیس نے آج یہ بات بتائی۔ یہ خبر ملنے پر چیف منسٹر کیرالا پی وجین نے طالبہ کے مزاحمتی عمل کو بہادری اور جرأتمندی قرار دیتے ہوئے سراہا۔ اُنھوں نے طالبہ کی تمام تر مدد کا وعدہ کرتے ہوئے یہاں میڈیا والوں سے کہاکہ یہ واقعی بڑی جرأتمندانہ مزاحمت ہے۔ اُس لڑکی کی شکایت کے مطابق 54 سالہ شخص کئی سال سے اُسے تنگ کررہا تھا۔ کل رات جب اُس نے مکان میں اُسے پھر ایک بار تنگ کرتے ہوئے جبر کرنے کی کوشش کی تو طالبہ نے چاقو سے اُس کا عضو مخصوص کاٹ ڈالا۔ اسٹیٹ ویمنس کمیشن کی رکن پرمیلا دیوی نے اِس واقعہ پر صدمے کا اظہار کیا اور کہاکہ لڑکی کو برسوں سے ہراسانی ، تکلیف اور ذلت سے دوچار ہونے کے بعد مجبوراً انتہائی قدم اُٹھانا پڑا۔ پولیس نے کہاکہ خاطی شخص کو شدید زخموں کے ساتھ سرکاری دواخانے میں شریک کرایا گیا جہاں اُس کی حالت اب مستحکم ہے۔ طالبہ کے خلاف ابھی تک کوئی کیس درج نہیں کیا گیا ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT